مندر پر حملہ: توہین مذہب کے الزامات کے تحت مقدمہ درج، بحالی کا کام جاری

اردو نیوز  |  Aug 06, 2021

رحیم یار خان کے علاقے بھونگ میں ایک مندر کو مشتعل افراد کی جانب سے نقصان پہنچانے پر توہین مذہب کے الزامات کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا ہے، جبکہ مندر کی بحالی کا کام شروع کر دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے جمعرات کو ایک ٹویٹ کے ذریعے کہا تھا کہ ’حکومت مندر کی مرمت کروائے گی۔‘

جمعرات کو ہی سپریم کورٹ کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق ’پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی اور پاکستان ہندو کونسل کے سرپرست اعلٰی رمیش کمار نے چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد سے اس واقعے کا نوٹس لینے کی درخواست کی تھی۔

چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد اس معاملے کی سماعت چھ اگست کو کریں گے اور اس سلسلے میں پنجاب کے چیف سیکریٹری اور صوبائی پولیس کے سربراہ کو حاضری کے نوٹسز جاری کر دیے گئے ہیں۔ 

خیال رہے کہ بدھ کی شب سوشل میڈیا پر رحیم یار خان کے علاقے بھونگ میں ایک مندر کو مشتعل افراد کی جانب سے نقصان پہنچانے کی ویڈیوز منظر عام پر آئی تھیں۔ 

جبکہ ضلعی پولیس کا کہنا تھا کہ ’ملزمان کے خلاف قانونی کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔‘

رحیم یار خان کی ضلعی پولیس کے ترجمان نے اردو نیوز کو بتایا تھا کہ ’علاقے میں ایک مدرسے کی بے حرمتی کرنے کے الزام میں ایک غیر مسلم لڑکے کی گرفتاری کے بعد عدالت سے رہائی ملنے پر مقامی افراد مشتعل ہوئے۔‘

عمران خان نے جمعرات کو ایک ٹویٹ کے ذریعے کہا تھا کہ ’حکومت مندر کی مرمت کروائے گی‘ (فوٹو: پاکستان ہندو کونسل)بدھ کی شب رحیم یار خان پولیس کے ترجمان نے بتایا تھا کہ ’سینکڑوں مشتعل شہری بھونگ میں بازار کو بند کروانے کے بعد احتجاج کرتے ہوئے موٹر وے ایم فائیو پر پہنچے۔‘

مظاہرین نے موٹر وے ایم فائیو کو ٹریفک کے لیے بند کیا اور پولیس کی جانب سے مذاکرات ناکام ہونے پر مشتعل مظاہرین نے مذہبی مقامات کو نشانہ بنایا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More