پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں بروکریج اکاؤنٹس کھولنا آسان ہوگیا

سماء نیوز  |  Oct 13, 2021

فوٹو: پی ایس ایکس

اسٹیٹ بینک کے حالیہ اقدامات نے بروکریج ہاؤسز کے پاس اکاؤنٹ کھولنے کا عمل آسان بنادیا۔ سادہ فارم، آن لائن اکاؤنٹ کی سہولت متعارف کرادی گئی جبکہ بایو میٹرک کی شرط ختم کردی گئی ہے۔

ایم ڈی پاکستان اسٹاک ایکس چینج فرخ ایچ خان کا کہنا ہے کہ اسٹیٹ بینک کے حالیہ اقدامات سے بروکریج ہاؤسز کے پاس اکاؤنٹ کھولنے کا عمل آسان کردیا گیا ہے، فارم سادہ کردیا اور اب آن لائن بھی اکاؤنٹ کھولا جاسکتا ہے، جبکہ بایو میٹرک کی شرط بھی ختم کردی گئی ہے اور بینک کی معلومات کو بروکریج اکاؤنٹ کیلئے بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کیلئے متعارف کردہ روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس کا بھی اچھا رسپانس مل رہا ہے، توقع ہے کہ بہت جلد ملک کے اندر بھی شہریوں کو بینک کے ڈیجٹل اکاؤنٹس کے سلسلے میں سہولیات ملیں گی، جس کا فائدہ اسٹاک مارکیٹ کو بھی ہوگا اور چھوٹے انویسٹر بڑھیں گے۔

بدھ کو پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں صحافیوں سے گفتگو  کرتے ہوئے فرخ خان نے کہا کہ نئے سرمایہ کاروں کیلئے وسیع مواقع ہیں لیکن عارضی سرمایہ کاری کے بجائے لانگ ٹرم انویسٹ کیا جائے اور میوچل فنڈز کے ذریعے سرمایہ لگایا جائے تو بینک اکاؤنٹس سے زیادہ منافع ہوتا ہے۔

اسٹاک مارکیٹ کیوں گر رہی ہے؟

ایم ڈی فرخ خان کے مطابق گزشتہ تقریباً ڈیڑھ ماہ سے کئی ایسی چیزیں اکٹھی ہوگئیں ہیں، جس کی وجہ سے مارکیٹ دباؤ میں ہے، ان عوامل میں افغانستان میں بڑی تبدیلی بھی شامل ہے، اس کے علاوہ خام تیل کی قیمتیں عالمی مارکیٹ میں دگنی ہوگئیں، شرح سود بڑھ گئی اور پاکستانی روپیہ دباؤ کا شکار ہے، جبکہ پاکستان اسٹاک ایکس چینج کی ایمرجنگ مارکیٹ سے فرنٹیئر مارکیٹ منتقلی سے بھی پاکستان اسٹاک مارکیٹ پر منفی اثرات مرتب ہوئے ہیں۔

ایم ڈی پی ایس ایکس کا کہنا تھا کہ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں یہ منفی اثرات عارضی ہیں، ہماری مارکیٹ اب بھی بہتر منافع دینے والی مارکیٹ ہے، گزشتہ 20 سال میں 19 فیصد ڈالر میں منافع دیا ہے، فرنٹیئر مارکیٹ میں شامل ہونے کی وجہ سے مارکیٹ کیپٹلائزیشن کم ہوا ہے لیکن فرنٹیئر مارکیٹ کا بھی اپنا فائدہ ہے، حکومت کو سرکلر ڈیٹ اور انفرااسٹرکچر کی فنانسنگ کیلئے اسٹاک مارکیٹ کو استعمال کرنا چاہئے۔

نیا ٹریڈنگ سسٹم کب آپریشنل ہوگا؟

ایم ڈی پاکستان اسٹاک ایکس چینج فرخ خان نے مزید کہا کہ پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں نیا ٹریڈنگ سسٹم رواں ماہ میں ہی آپریشنل ہوجائے گا، اس سسٹم نے پہلے کام شروع کرنا تھا لیکن اسٹیک ہولڈرز کی جانب سے بعض سفارشات آنے پر سسٹم کو اس کے مطابق اپ گریڈ کیا جارہا ہے۔

یہ سسٹم مارچ میں آپریشنل ہونا تھا لیکن کرونا کی وجہ سے ایسا نہ ہوسکا، اس کے بعد چیئرمین ایس ای سی پی عامر خان نے  12 جولائی کو نیا ٹریڈنگ سسٹم آپریشنل ہونے کا کہا تھا لیکن اس پر بھی عمل درآمد نہیں ہوسکا۔

ایم ڈی فرخ خان کہتے ہیں کہ پوری تیاری کرلی گئی ہے، رواں ماہ ہی نیا ٹریڈنگ سسٹم کام شروع کردے گا۔

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں لگنے والا نیا ٹریڈنگ سسٹم جدید ٹیکنالوجی کا حامل ہے، جس میں ٹریڈنگ کے عمل میں تیزی آئے گی جبکہ اس سسٹم کے ساتھ سرویلنس سسٹم بھی ہوگا، جس سے باقاعدہ پلاننگ کے تحت مارکیٹ کو مصنوعی طور پر اٹھانے یا گرانے کی نگرانی ہوسکے گی اور شیئرز کی غیر فطری خرید و فروخت اور غیر معمولی ٹریڈنگ کا ڈیٹا مل سکے گا، جس کے نتیجے میں توقع ظاہر کی جارہی ہے کہ اسٹاک مارکیٹ میں شفافیت بڑھے گی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More