امریکا:نئی تاریخ رقم، کسی خاتون کو پہلی مرتبہ اصدارتی اختیارمنتقل

سماء نیوز  |  Nov 20, 2021

امریکا کے صدر جو بائیڈن کی غیرحاضری کے باعث ملک کی نائب صدر کملا ہیرس کو مختصر دورانیے کے لیے اقتدار منتقل کیا گیا جس کے باعث وہ ملک کی قائم مقام صدر بننے والی پہلی خاتون نائب بن گئیں۔

بین القوامی میڈیا کے مطابق جو بائیڈن کے طبی معائنے کے دوران کملا ہیرس کو سوا گھنٹے کے لیے قائم مقام صدر کا چارج دیا گیا۔ واضح رہے کہ بھارتی نژاد کملا امریکہ کی تاریخ کی پہلی سیاہ فام ایشیائی نژاد نائب صدر ہونے کا اعزاز بھی رکھتی ہیں۔

وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ معمول کے طبی معائنے کے دوران 79 سالہ جو بائیڈن کی کلونو سکوپی کے لیے انہیں بے ہوش کرنے کے لیے اینستھیزیا دیا گیا۔ انہیں واشنگٹن سے کچھ دور واقع والٹر ریڈ میڈیکل سینٹر گئے تھے۔سپر پاور کے صدر ہونے کا اعزاز رکھنے کے علاوہ جو بائیڈن کو بھی یہ خصوصیت بھی حاصل ہے کہ وہ امریکی تاریخ میں صدارت کے منصب پر فائز ہونے والے سب سے عمر رسیدہ صدر ہیں۔ جنوری 2021 میں عہدہ سنبھالنے کے بعد جو بائیڈن کا یہ پہلا طبی معائنہ تھا۔

جس دوران جو بائیڈن بے ہوش رہے اس دورانیے میں روایت کے مطابق 57 سالہ نائب صدر نے اقتدار سنبھالا۔ واضح رہے کہ اس میں امریکی مسلح افواج اور جوہری ہتھیاروں کے ذخیرے پر کنٹرول بھی شامل تھا جس کی باگ ڈور بھی اس دوران خاتون نائب صدر کے ہاتھ میں رہی۔

قبل ازیں آئین کے مطابق اقتدار کی عارضی منتقلی سن 2002 اور سن 2007 میں بھی ہوئی تھی جب صدر جارج ڈبلیو بش کو اسی قسم کے طبی مرحلے سے گزرنا پڑا تھا۔

یاد رہے کہ امریکی میڈیا نے حال ہی میں یہ انکشاف کیا ہے کہ ان دنوں جو بائیڈن اور کملا ہیرس کے مابین اختلافات شدت اختیار کرچکے ہیں۔

سی این این کی ایک رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ دونوں جانب غصے کی آگ بھڑک رہی ہے اور ہر فریق دوسرے پر الزام تراشی کر رہا ہے۔ الغرض وائٹ ہاؤس میں صورت حال پیچیدہ بتائی جا رہی ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More