روس پر حملہ ہوا تو ہم خاموش نہیں بیٹھیں گے، بیلا روسی صدر کی دھمکی

بول نیوز  |  Jan 28, 2022

بیلا روس کے صدر الیگزینڈر لوکاشینکو کا کہنا ہے کہ اگر روس پر براہِ راست حملہ کیا گیا تو ان کا ملک باہمی اتحادی معاہدوں کی پاسداری کرتے ہوئے روس کا ساتھ دے گا اور جنگ میں شامل ہو جائے گا۔

بیلا روسی پارلیمنٹ میں اپنی تقریر میں صدر الیگزینڈر لوکاشینکو نے خطے میں روس، امریکا اور نیٹو کے درمیان بڑھتی ہوئی فوجی کشیدگی کے بارے میں اپنے جائزے بھی پیش کیے۔

صدر الیگزینڈر لوکاشینکو کے مطابق یوکرائن پسِ پردہ سودے بازی کا موضوع ہے۔ یوکرائن کے عوام کو تنازعات کے شعلوں میں دھکیل دیا جاتا ہے اور وہ سب جانتے بوجھتے ہوئے جارحیت کے لیے تیار ہو جاتے ہیں۔

بیلا روس کے صدر الیگزینڈر لوکاشینکو نے اراکینِ پارلیمنٹ کو بتایا کہ خطے میں فوجی تصادم کا امکان صرف دو صورتوں میں ہو سکتا ہے کہ اگر بیلا روس پر براہ راست حملہ کیا جاتا ہے اور ہمارے خلاف جنگ چھیڑی جاتی ہے۔

صدر الیگزینڈر لوکاشینکو کے مطابق دوسری صورت حال یہ ہے کہ اگر بیلا روس کے اتحادی روس پر براہ راست حملہ کیا جاتا ہے تو پھر بیلا روس بھی اِس جنگ میں شامل ہو جائے گا کیونکہ ہمارے درمیان باہمی اتحادی معاہدے موجود ہیں۔

بیلا روسی صدر الیگزینڈر لوکاشینکو نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ اُن کے ملک پر حملے کی صورت میں لاکھوں روسی فوجی بیلاروس کے دفاع میں شامل ہوں گے۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More