سری لنکا: تخريب کاروں کو ديکھتے ہی گولی مارنےکا حکم

سماء نیوز  |  May 11, 2022

سری لنکا کی وزارت دفاع نے ایک بیان میں کہا کہ حکومت نے اپنی مسلح افواج کو ملک میں فسادات روکنے کے لیے پرتشدد مظاہرین کو گولی مارنے کے احکامات دے دیے ہیں۔

وزارت دفاع کے ترجمان نالن ہیراتھ نے کہا کہ سیکیورٹی اہلکاروں کو عوامی املاک کو نقصان پہنچانے والے یا عوام کی جانوں کو خطرے میں ڈالنے والے کسی بھی شخص پر گولی چلانے کا حکم دیا گیا ہے۔

احکامات کے بعد سری لنکن دارالحکومت ميں فوج طلب کر لی گئی ہے اور بکتر بند گاڑياں اور فوج کی بھاری نفری کولمبو کی سڑکوں پر تعينات ہيں۔

واضح رہے کہ سری لنکا میں شديد اقتصادی بحران اب سياسی بحران کی شکل  اختيار کر گيا ہے اور کئی ہفتوں سے حکومت مخالف مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔

پير کو حکومت کے حاميوں کی جانب سے مظاہرين پر حملے کے بعد وزير اعظم مہندرا راجاپاکسے مستعفی ہو گئے تاہم اپوزيشن جماعتیں اب صدر گوتابايا راجاپاکسے سے بھی استعفی مانگ رہی ہے اور اس جنہوں نے پيشکش مسترد کر دی ہے۔

سری لنکا میں منگل سے اب تک پرتشدد واقعات میں 8 افراد ہلاک ہو چکے ہيں، جن ميں حکمران جماعت کے ايک قانون ساز اور دو پوليس اہلکار بھی شامل ہيں۔ زخمی ہونے والوں کی تعداد 219 ہے جبکہ 60 گاڑيوں اور 104 عمارات کو بھی نذر آتش کر ديا گيا۔

صدر گوتابايا راجاپاکسے نے بدھ کو عوام سے اپيل کی ہے کہ وہ نسلی اور مذہبی بنيادوں پر تقسيم سے گزير کريں اور پر امن رہيں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More