کئی روز بعد اسٹاک مارکیٹ میں نمایاں تیزی

سماء نیوز  |  May 13, 2022

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کئی روز کی مندی کے بعد جمعہ کو تیزی کا رجحان رہا، کے ایس ای 100 انڈیکس 588 پوائنٹس اضافے کے بعد 43 ہزار 486 پوائنٹس پر بند ہوا۔

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں کاروباری ہفتے کے آخری روز جمعہ کو مثبت رجحان رہا اور سرمایہ کاروں کی جانب سے منافع بخش شیئرز کی قیمتیں پیر اور بدھ کی مندی کے سبب کم ہونے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے خریداری کی گئی۔

سرمایہ کاروں کے سرگرم ہونے کے باعث کے ایس ای 100انڈیکس میں 950 پوائنٹس کا اضافہ بھی ریکارڈ کیا گیا اور ٹریڈنگ کے دوران 43 ہزار کی نفسیاتی حد کو بحال کرتے ہوئے 43 ہزار 853 پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا، بعد میں پرافٹ ٹیکنگ کے سبب مذکورہ سطح برقرار نہ رہ سکی لیکن تیزی کا رجحان آخر تک غالب رہا اور کاروبار کے اختتام پر انڈیکس 588 پوائنٹس کے اضافے سے 43 ہزار 486 پوائنٹس پر بند ہوا۔

اسٹاک ماہرین کے مطابق بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے بھیجی جانے والی ترسیلات زر میں اپریل کے دوران نمایاں اضافے کی وجہ سے بھی سرمایہ کار پر اعتماد نظر آئے اس کے علاوہ تیل وگیس سیکٹر کا حصہ بھی تیزی میں نمایاں رہا۔ ٹاپ لائن سیکورٹیز کی رپورٹ کے مطابق او جی ڈی سی ایل، پی او ایل اور پی پی ایل کی وجہ سے انڈیکس میں 125 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

پاکستان اسٹاک ایکسچینج کی رپورٹ کے مطابق جمعہ کو مجموعی طور پر 334 کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں 236 کمپنیوں کے شیئرز کی قیمتوں میں اضافہ جبکہ 87 کمپنیوں کے شیئرز کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی اور 20 کمپنیوں کے حصص کی قیمتیں مستحکم رہیں۔

بیشتر کمپنیوں کے شیئرز کی قیمتیں بڑھنے کے سبب مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں 93 ارب 58 کروڑ 96 لاکھ روپے کا اضافہ ہوا تاہم حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم جمعرات کے مقابلے میں 26.85 فیصد کم رہا۔

جمعہ کو ٹریٹ کارپوریشن، سی نیر جیکو، پاک ریفائنری، لوٹی کیمکل اور ورلڈ کال ٹیلی کام کے شیئرز کی سب سے زیادہ خرید وفروخت ہوئی، سلے پاکستان اور سفائر فائبر کے شیئرز کی قیمتوں میں سب سے زیادہ اضافہ ریکارڈ گیا جبکہ اسماعیل انڈسٹریز اور سیمنز پاک کے شیئرز کی قیمتوں میں سب سے زیادہ کمی ہوئی۔

واضح رہے کہ پاکستان اسٹاک ایکس چینج رواں کاروباری ہفتے کے آغاز سے ہی شدید منفی اثرات کی لپیٹ میں رہا، پیر کو پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں کے ایس ای 100 انڈیکس 1447 پوائنٹس کی کمی سے 43 ہزار 393 پوائنٹس پر آگیا تھا اور مندی کے سبب سرمایہ کاروں کو 2 کھرب 28 ارب 57 کروڑ 19 لاکھ روپے سے زائد کا نقصان ہوا، جبکہ منگل کو انڈیکس میں 111 پوائنٹس ریکور ہوگئے تھے، لیکن بدھ کو ایک بار پھر مندی کا رجحان لوٹ آیا  اور 100 انڈیکس 641 پوائنٹس کی کمی سے 42 ہزار 863 پوائنٹس پر آگیا تھا، جمعرات کو انڈیکس میں 35.29 پوائنٹس اور جمعہ کو 588 پوائنٹس ریکور ہوگئے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More