گال ٹیسٹ: عبدللہ شفیق کی سینچری نے پاکستان کی فتح کی امیدیں جگا دیں

اردو نیوز  |  Jul 20, 2022

گال میں کھیلے جا رہے دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ میں پاکستان نے جیت کے لیے درکار 342 رنز کے ہدف کے تعاقب میں تین وکٹوں پر 222 رنز بنائے ہیں۔ 

میچ کے چوتھے دن کے اختتام پر پاکستان نے تین وکٹوں پر 222 رنز بنائے ہیں۔ میچ میں فتح کے لیے پاکستان کو 120 رنز کی ضرورت ہے جب کہ اس کے سات وکٹیں باقی ہیں۔  

پاکستانی بیٹر عبد اللہ شفیق نے شاندار سینچری سکور کر لی اور وہ 112 رنز پر کریز پر موجود ہیں۔

عبد اللہ شفیق 239 گیندوں پر اپنی سینچری مکمل کی۔ یہ عبد اللہ شفیق کی کیریئر کی اب تک دوسری سینچری ہے۔

اس سے پہلے عبداللہ شفیق نے رواں سال آسٹریلیا کے خلاف راولپنڈی میں 136 رنز کی ناقابلِ شکست اننگز کھیلی تھی۔

عبد اللہ شفیق کے بارے میں دلچسپ بات یہ ہے کہ وہ فرسٹ کلاس کرکٹ میں صرف تین میچ کھیلے ہیں، جس کے بعد انھیں پاکستانی ٹیم میں شامل کر لیا گیا تھا۔

کپتان بابر اعظم 55 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔ بابر اعظم نے اپنے ٹیسٹ کیریئر میں تین ہزار رنز بھی پورے کر لیے ہیں۔

قبل ازیں منگل کی صبح سری لنکا نے دوسری اننگز میں نو وکٹوں کے نقصان پر 329 رنز پر  اپنی دوسری اننگز کا آغاز کیا اور آخری وکٹ 337 رنز پر گری۔

سری لنکا کو پہلی اننگز میں 4 رنز کی برتری حاصل تھی اور میچ کے چوتھے دن پاکستان کو جیتنے کے لیے 342 رنز کا ایک مشکل ہدف دیا۔

دوسری اننگز میں سری لنکا کی جانب سے دنیش چندیمل 94 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے جبکہ دوسری نمایاں بلے بازوں میں کوشل مینڈس نے 76 اور اوشادا فرنینڈو نے 64 رنز سکور کیے۔

سری لنکا کی جانب سے دوسری میں اننگز میں کوشل مینڈس نے 76 اور اوشادا فرنینڈو نے 64 رنز سکور کیے ہیں۔

پاکستان کی جانب سے محمد نواز نے پانچ کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ یاسر شاہ نے تین، حسن علی اور نسیم شاہ  نے ایک وکٹ حاصل کی ہے۔

عبد اللہ شفیق کی جانب سے سینچری بنانے کے بعد سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بھی تعریفی تبصرے دیکھنے میں آ رہے ہیں۔

حسن چیمہ نامی صارف اپنے ٹویٹ میں کہتے ہیں کہ ’شاندار سنچری اور ابھی مزید اور بھی بنیں گی، سپیشل پلیئر، عبد اللہ شفیق۔‘

Magnificent hundred and many more to come. Special player, Abdullah Shafique!

— Hassan Cheema (@Gotoxytop1) July 19, 2022

رمیشا شیخ نامی ایک صارف نے تعریف کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ’عبد اللہ شفیق، کیا باری کھیلی ہے، چھٹی اننگز ہے اور 73 کی اوسط، بُوم۔‘

تحریم نامی ایک صارف لکھتی ہیں کہ ’عبد اللہ شفیق ایک خاص موتی ہیں۔‘

ابراہام نامی ایک صارف نے لکھا ہے کہ ’عبداللہ شفیق کی جانب سے بہترین سینچری، یہ ایک اصل ٹیلنٹ ہیں، بہترین تکنیک ہے اور ذہنی قابلیت بھی، ایک لمبا کیرئیر ان کا منتظر ہے۔‘

ٹوئٹر یوزر مادھورما کہتی ہیں کہ 2022 بڑے ہدف مکمل کرنے کا سال ہے اور پاکستان یہ روایت قائم رکھے گا۔‘ 

اننگ کا آغاز عبداللہ شفیق اور امام الحق نے کیا جو کہ ایک اچھا آغاز ثابت ہوا، اس حوالے سے ٹوئٹر ہینڈل پوپنگ کریز پر لکھا گیا ہے کہ ’عبداللہ شفیق اور امام الحق نے پاکستان کو بہترین آغاز دیا ہے۔ چوتھے دن بغیر کوئی وکٹ دیے 68 رنز بنا لیے۔‘

وحید ریاض کرکٹ میچ پر تبصرہ کرتے ہیں کہ ’ اگر پاکستان جارحانہ بیٹنگ کریں تو میچ جیت سکتے ہیں ورنہ وہ پھنس جائیں گے۔‘

پاکستان نے اس سے پہلے 2015 میں پالیکلے میں کھیلے گئے ٹیسٹ میچ میں 300 رنز سے زیادہ کا ہدف حاصل کیا تھا۔

خیال رہے گال میں جاری پہلے ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگز میں پاکستانی ٹیم کپتان بابر اعظم کی سنچری کی بدولت سری لنکا کے 222 رنز کے جواب میں 218 رنز پر آؤٹ ہوگئی تھی.

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More