مانچسٹر ٹیسٹ: انگلینڈ نے تین وکٹوں سے پاکستان کو شکست دے دی

بی بی سی اردو  |  Aug 08, 2020

انگلینڈ، پاکستان
Getty Images

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان مانچسٹر میں جاری پہلے ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن کے دوسرے سیشن کا کھیل جاری ہے جہاں انگلینڈ 277 رنز کے ہدف کی جانب گامزن ہے، اس سے قبل پاکستان کی دوسری اننگز 169 رنز پر ختم ہو گئی ہے۔

ووکس 80 بنا کر موجود ہیں۔ آؤٹ والے ساتویں کھلاڑی براڈ تھے جبکہ چھٹے نمبر پر جوس بٹلر آؤٹ ہوئے تھے، جنھوں نے 75 رنز بنائے ہیں۔ اس وقت انگلینڈ کا چھ وکٹوں کے نقصان پر 273 سکور ہے۔

ووکس کا ساتھ دینے کے لیے نئے آنے والے کھلاڑی براڈ ہیں، جنھوں نے ابھی تک چھ رنز بنایا ہے۔

انگلینڈ کے تیسرے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی جو روٹ تھے جنھوں نے 42 رنز بنا کر نسیم شاہ کی گیند پر بابر اعظم کو سلپ میں کیچ پکڑا بیٹھے۔ چوتھے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی بین سٹوک نو رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

انگلینڈ کے پانچویں آؤٹ ہونے والے کھلاڑی او جے پوپ تھے جو شاہین شاہ آفریدی کی بال پر شاداب خان کو کیچ دے بیٹھے۔

ڈوم سبلی 36 رنز پر کیچ آؤٹ ہوئے۔ ان پر لیگ سپنر یاسر شاہ نے اپنا جادو چلایا۔ انگلینڈ کی جانب سے روری برنس اور ڈوم سبلی نے اننگز کا آغاز کیا۔

پاکستان انگلینڈ
Getty Images

کھانے کے وقفے کے بعد سے شروع ہونے والے کھیل میں یاسر شاہ نے برطانوی بلے بازوں پر دباؤ بڑھا رکھا ہے جبکہ انگلینڈ کے بلے باز دفاعی بیٹنگ کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔

پاکستان کی طرف سے شاہین شاہ آفریدی اور محمد عباس نے بولنگ کا آغاز کیا۔ انگلیڈ کے پہلے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی روری برنس کو محمد عباس نے دس رنز پر ایل بی ڈبلیو کیا۔

* میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

* پاکستان کو آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 244 رنز کی برتری حاصل

* دوسرے دن کا کھیل شان مسعود اور پاکستانی بولرز کے نام رہا

* بابر اعظم کی نصف سنچری، پاکستان کی پوزیشن مستحکم

چوتھے دن کے آغاز پر پاکستان نے جارحانہ انداز اپنایا اور گو کہ وہ آج صبح صرف 16 گیندیں کھیل سکے لیکن اس دوران 32 رنز بٹورنے میں کامیاب ہو گئے۔

یاسر شاہ نے صورتحال کے مطابق بہترین بیٹنگ کی اور 33 رنز بنائے جس میں سٹوارٹ براڈ کو ایک زور دار چھکا بھی شامل تھے۔ وہ پاکستان کے ٹاپ سکورر بھی رہے۔

انگلینڈ کی جانب سے براڈ نے ایک بار پھر تین وکٹیں حاصل کیں جبکہ بین سٹوکس نے دو کھلاڑی آؤٹ کیے۔

https://twitter.com/wasimakramlive/status/1291741600855580672

تیسرے دن کے کھیل کے اختتام پر پاکستان کو انگلینڈ پر 244 رنز کی برتری حاصل تھی جبکہ اس کی آٹھ وکٹیں گر چکی تھیں۔ اپنی دوسری اننگز میں پاکستان نے گذشتہ روز 137 رنز بنائے تھے۔

گذشتہ شب ای ایس پی این کریک انفو سے بات کرتے ہوئے پاکستان کے سپن کوچ مشتاق احمد کا کہنا تھا کہ امید ہے پاکستانی بیٹنگ میں ہونے والی غلطیاں پاکستان کی جیت کی کوششوں میں آڑے نہیں آئیں گی کیونکہ پاکستان کے پاس دو بہترین سپنر موجود ہیں۔

اسی طرح وسیم اکرم نے ٹوئٹر پر ایک پیغام میں کہا کہ „دیکھا! کون کہہ رہا تھا کہ پاکستان کو دو سپنرز کی ضرورت نہیں۔‘

تیسرا دن انگلینڈ کے نام رہا

انگلینڈ، پاکستان
Reuters

دوسری اننگز میں برطانوی بولرز پاکستانی بلے بازوں پر حاوی رہے ہیں۔ پاکستان نے تیسرے روز اپنی دوسری اننگز کی بیٹنگ کا آغاز 107 رنز کی برتری کے ساتھ کیا تھا۔ پاکستان کے پہلےاننگز کے سکور 326 رنز کے جواب میں تیسرے روز انگلینڈ کی ٹیم 219 رنز پر آل آؤٹ ہوگئی تھی۔

پاکستانی بولرز میں یاسر شاہ سرفہرست رہے جنھوں نے چار وکٹیں حاصل کیں جبکہ انگلش بلے باز اولی پوپ نے 62 رنز کی باری کھیلی۔ شاداب خان اور محمد عباس نے دو، دو وکٹیں حاصل کیں۔ اس طرح پاکستان کو دوسری اننگز میں بیٹنگ سے قبل انگلینڈ پر 107 رنز کی برتری حاصل ہوئی۔

دوسری اننگز میں شان مسعود آؤٹ ہونے والے پہلے پاکستانی بلے باز تھے جنھیں سٹیورٹ براڈ نے کیپر جوس بٹلر کے کیچ کے ساتھ پویلین واپس بھیجا۔

جیمز اینڈرسن کی گیند پر عابد علی کا کیچ بین سٹوکس نے اس وقت ڈراپ کیا جب وہ محض 7 رنز پر بیٹنگ کر رہے تھے۔ لیکن چائے کے وقفے کے بعد عابد علی ڈوم بیس کو جارحانہ شاٹ مارنے کی کوشش میں 20 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوگئے۔

ان کے بعد بابر اعظم کرس ووکس کی گیند پر سلپ پر کیچ آؤٹ ہوئے۔ انھوں نے محض 5 رنز کے بعد اپنی وکٹ گنوا دی۔ کپتان اظہر علی کو بھی کرس ووکس نے ہی آؤٹ کیا۔ وہ 54 گیندوں پر 18 رنز بنانے کے بعد ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

محمد رضوان
Reuters

تیز رن لینے کی کوشش میں اسد شفیق 29 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ ان کی اننگز میں تین چوکے شامل تھے۔ بین سٹوکس نے محمد رضوان کو ایل بی ڈبلیو کیا اور 27 رنز پر ان کی باری ختم کردی۔

سٹیورٹ براڈ کی گیند پر شاداب خان 15 رنز بنا کر ایل بی ڈبلیو ہوئے۔ بین سٹوکس نے شاہین آفریدی کو باؤنسر سے سرپراز دیا سلپ پر ان کا کیچ پکڑا گیا۔

اولی پوپ اپنی نصف سنچری مکمل کرنے کے بعد سکور بورڈ میں اضافہ کرنے کی کوشش کر رہے تھے لیکن نسیم شاہ کی شارٹ پِچ گیند پر ان کی ایج لگی اور شاداب خان نے ان کا کیچ پکڑا۔ انھوں نے آٹھ چوکوں کے ساتھ 62 رنز بنائے تھے اور بٹلر کے ساتھ 65 رنز کی شراکت قائم کر تھی۔

یاسر شاہ نے لنچ کے بعد اپنے پہلے اوور میں ایک سیدھی جاتی گیند سے جوس بٹلر کو بولڈ کیا۔ بٹلر انگلینڈ کے لیے میچ میں واپسی کے لیے اہم تھے لیکن وہ صرف 38 رنز بناسکے۔

ڈوم بیس کریز پر زیادہ وقت نہ گزار سکے اور یاسر شاہ کی گھومتی گیند پر ان کا ایج لگا۔ سلپ پر موجود اسد شفیق نے ایک اچھا کیچ پکڑا۔

کرس ووکس نے دو چوکوں کو ساتھ 19 رنز بنائے لیکن یاسر شاہ کی گیند پر بولڈ ہوئے۔ شاداب خان نے اپنے دوسرے اوور میں پہلی وکٹ حاصل کی اور جوفرا آرچر کو 16 رنز پر کیچ آؤٹ کر دیا۔

اس کے بعد شاداب نے جیمز اینڈرسن کو ایل بی ڈبلیو کیا۔

دوسرے روز کے کھیل میں پاکستان کا پلڑا بھاری تھا

یاسر شاہ
Reuters
لیگ سپنر یاسر شاہ نے 66 رنز دیتے ہوئے چار وکٹیں حاصل کیں

جمعے کو میچ کے تیسرے دن اولڈ ٹریفرڈ کے میدان پر ان دونوں بلے بازوں نے چار وکٹوں کے نقصان پر 92 رنز کے سکور سے انگلینڈ کی پہلی اننگز دوبارہ شروع کی ہے۔

میچ کا دوسرا دن انگلش بلے بازوں کے لیے زیادہ اچھا نہیں رہا تھا اور میچ میں واپسی کے لیے میزبان ٹیم کی نظریں اولی پوپ اور جوس بٹلر کی جوڑی پر ٹکی ہوئی تھیں۔ دونوں کے درمیان 65 رنز کی شراکت رہی۔

پاکستان کے اپنی پہلی اننگز میں شان مسعود کی شاندار سنچری کی بدولت 326 رنز بنائے تو جواب میں انگلینڈ کی پہلی اننگز کا آغاز تباہ کن تھا اور 12 کے سکور پر اس کی تین وکٹیں گر گئی تھیں۔

پاکستان کو پہلی کامیابی شاہین آفریدی نے دلوائی جنھوں نے پہلے ہی اوور میں روری برنز کو ایل بی ڈبلیو کر دیا۔ دوسرے اینڈ سے محمد عباس نے پہلے ڈوم سبلی اور پھر بین سٹوکس کی اہم وکٹ لے کر میزبان کی ٹیم مشکلات اور بڑھا دیں۔

کپتان جو روٹ آؤٹ ہونے والے چوتھے بلے باز تھے جنھیں یاسر شاہ نے وکٹوں کے پیچھے کیچ کروایا۔

تاہم اولی پوپ نے پراعتماد اور جارحانہ انداز میں پاکستانی بولرز کا مقابلہ کیا اور دوسرے اینڈ پر ڈٹے رہے۔

نسیم شاہ
Reuters

پاکستان کو انگلش ٹیم کی 'ٹیل' تک پہنچنے کے لیے مزید ایک وکٹ درکار ہے۔ اس میچ میں انگلینڈ کی جانب سے چھٹے نمبر پر کرس ووکس بلے بازی کرنے آئیں گے جن کی گذشتہ پانچ میچوں میں بلے بازی کی اوسط دوہرے ہندسوں میں بھی نہیں ہے۔

اس میچ میں پاکستان کی ٹیم میں دو لیگ سپنرز شاداب خان اور یاسر شاہ کو شامل کیا گیا ہے جبکہ بلے بازی کی ذمہ داری شان مسعود، عابد علی، اظہر علی، بابر اعظم، اسد شفیق اور رضوان احمد کے کاندھوں پر ہے جبکہ فاسٹ بولنگ سکواڈ شاہین آفریدی، محمد عباس اور نسیم شاہ پر مشتمل ہے۔

ادھر جو روٹ کی قیادت میں انگلینڈ کی ٹیم میں ڈوم سبلی، روری برنز، بین سٹوکس، اولی پوپ، جوس بٹلر، کرس ووکس، ڈوم بیس، سٹیورٹ براڈ اور جیمز اینڈرسن پر مشتمل ہے۔

yasir shah
Reuters
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More