توہین آمیز خاکے، اسلام آباد میں احتجاج

اردو نیوز  |  Oct 31, 2020

پاکستان کے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں فرانس میں شائع ہونے والے توہین آمیز خاکوں کے خلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین نے ڈپلومیٹک انکلیو میں فرانسیسی سفارت خانے کی طرف جانے کی کوشش کی۔ 

مظاہرین کو روکنے کے لیے پولیس کی جانب سے آنسو گیس کی شیلنگ کی گئی۔ اس کے بعد مظاہرین نے پولیس چوکی اور گرین  بیلٹ پر خشک گھاس کو آگ لگا دی۔ 

فرانس میں توہین آمیز خاکوں کے خلاف آل پاکستان انجمن تاجران نے جمعے کے روز احتجاج کی کال دے رکھی تھی۔ احتجاجی مظاہرے میں تاجر برادری، طلبہ اور مذہبی جماعتوں کے کارکنوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ 

اردو نیوز کے نامہ نگار بشیر چوہدری کے مطابق مظاہرین آب پارہ چوک پر جمع ہوئے اور خیابان سہروردی پر مارچ کرتے ہوئے ڈپلومیٹک انکلیو کی طرف جانے کی کوشش کی۔ 

سرینہ چوک سے پہلے ہی انتظامیہ نے کنٹینرز لگا کر راستہ بند کر رکھا تھا۔ مظاہرین نے کنٹینرز ہٹا کر آگے بڑھنے کی کوشش کی جس پر پولیس نے آنسو گیس کی شیلنگ کرکے مظاہرہن کو منتشر کیا۔

مظاہرین کی جانب سے پولیس پر پتھراؤ بھی کیا گیا۔ 

کافی دیر کی کشیدگی کے بعد مظاہرین کی جانب سے سرینہ چوک سے واپسی کا اعلان کیا گیا۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ آج کے مظاہرے کا مقصد دنیا کو پیغام دینا تھا کہ پیغمبر اسلام کی شان میں گستاخی برداشت نہیں کی جائے گی۔ 

مظاہرین کی جانب سے فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے کا مطالبہ بھی کیا گیا۔ 

 

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More