برطانیہ نے قرنطینہ کی مدت میں مزید کمی کردی

بول نیوز  |  Jan 17, 2022

برطانیہ نے کورونا وائرس کے مریضوں کے لیے قرنطینہ کی مدت میں مزید کمی کردی۔

برطانوی میڈیا کے مطابق عملے کی کمی کی وجہ سے معیشت اور ضروری خدمات متاثر ہونے کے ہفتوں بعد بالآخر حکومت نے طویل عرصے سے نافذ کورونا وائرس  کے قرنطینہ اصولوں کو تبدیل کردیا ہے۔

حکومت نے کورونا وائرس کے مریضوں کے لیے قرنطینہ کی مدت میں مزید کمی کرتے ہوئے  سات سے پانچ دن کردی ہے۔

سکریٹری صحت  ساجد جاوید نے قرنطینہ مدت کو سات سے کم کرکے پانچ دن تک کرنے کا خیر مقدم کیا ہے۔

مزید پڑھیئے: برطانیہ میں ویکسین لگوانے والے مسافروں کے لیے ٹیسٹنگ ختم

نئے اصول کا اطلاق آج صبح سے ہی ہوگا۔ آج صبح سے انگلینڈ میں لوگ ’اضافی آزادیوں‘کی بحالی کے اقدام کے طور پر پورے پانچ دن کے بعد اپنا قرنطینہ ختم کر سکتے ہیں۔

پانچویں یا چھٹے روز منفی ٹیسٹ رپورٹ کی صورت میں لوگ پورے پانچ دنوں کے بعد قرنطینہ چھوڑ سکتے ہیں۔

یہ اعلان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب ایک کابینہ کے وزیر نے کہا تھا  کہ اس ماہ کے آخر میں پابندیاں ہٹانے کے حوصلہ افزا اشارے  ہیں۔

مزید پڑھیئے: برطانیہ میں پہلی بار کورونا کیسز کی یومیہ تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کرگئی

دوسری جانب  یہ وزیر اعظم  بورس جونسن کے لاک ڈاؤن اسکینڈلز کے سلسلے کے بعد اپنی مقبولیت کو بحال کرنے کی  ایک موافق کوشش بھی ہے  ۔

لاک ڈاؤن لگائے جانے کے سبب بورس جونسن پر شدید تنقید کی جارہی تھی اور ان کے استعفیٰ کے بڑے مطالبات  بھی سامنے آئے تھے۔

یاد رہے کہ گزشتہ برس کرسمس سے چند روز پہلے برطانیہ نے قرنطینہ کی مدت 10 روز سے کم کرکے 7 روز کردی تھی۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More