متحدہ امارات کا اسٹیلتھ طیاروں کی خریدکیلئےامریکاسے معاہدہ

سماء نیوز  |  Jan 22, 2021

بشکریہ دی نیشنل

متحدہ عرب امارات نے امریکا سے جدید اسٹیلتھ اور ڈرون طیارے خریدنے کا نیا معاہدہ کرلیا۔

امریکی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹ پریس ( اے پی) کی جانب سے جاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات امریکا سے 50 جدید اسٹیلتھ ٹیکنالوجی کے ایف 35 طیارے اور 18 ڈرونز خریدے گا۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ یہ معاہدہ متحدہ عرب امارات اور ٹرمپ انتظامیہ کے درمیان طے پایا تھا۔ نئے امریکی صدر جو بائیڈن کی تقریب حلف برداری سے چند گھنٹے قبل ہی اس معاہدے پر دستخط کیے گئے تھے۔ اس وقت کے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ متحدہ عرب امارات کیساتھ معاہدہ مشرق وسطیٰ کے وسیع امن کو سامنے رکھ کر کیا گیا ہے۔

​رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکا اور متحدہ عرب امارات صدر بائیڈن کے اپنا عہدہ سنبھالنے سے پہلے اس معاہدے پر کام کر رہے تھے، تاہم اب نئے صدر نے کہا ہے کہ وہ سابق دور میں کیے گئے معاہدوں کا جائزہ لیں گے۔

متحدہ عرب امارات، مشرق وسطیٰ میں واشنگٹن کا ایک قریبی اتحادی ہے اور وہ طویل عرصے سے لاک ہیڈ مارٹن کے تیار کردہ ایف-35 لڑاکا جیٹ طیاروں کی خرید میں دلچسپی کا اظہار کر رہا تھا۔

اسٹیلتھ ٹیکنالوجی کے حامل ان طیاروں کی ایک خاص بات یہ ہے کہ وہ ریڈار پر پوشیدہ رہتے ہیں اور نظر نہیں اسکتے۔ رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات سے یہ وعدہ کیا گیا تھا کہ جب وہ اسرائیل کے ساتھ معمول کے تعلقات قائم کرنے پر تیار ہو جائے گا تو امریکہ اس معاہدے کو آگے بڑھا دے گا۔

جاری کردہ اطلاعات میں یہ نہیں بتایا گیا کہ متحدہ عرب امارت کو ایف-35 طیارے کب فراہم کیے جائیں گے، تاہم ابتدائی پروپوزل کے مطابق انہیں 2027 میں فراہم کیا جانا تھا۔

معاہدے میں ہوا سے ہوا میں، اور ہوا سے زمین پر ہدف کو نشانہ بنانے والے ڈرونز بھی شامل ہیں۔ معاہدے کی مالیت 23.37 بلین امریکی ڈالر ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More