ملک کی جیلوں میں ہزاروں قیدی ایڈز اور دیگر مہلک بیماریوں کا شکار

بول نیوز  |  Jan 18, 2020

پاکستان میں وفاقی وزارتِ انسانی حقوق کے مطابق ملک بھر کی جیلوں میں قید پانچ ہزار سے زائد قیدی ایڈز اور ہیپاٹائٹس جیسی مہلک بیماریوں کا شکار ہیں۔

وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری کی جانب سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں پاکستانی جیلوں میں قیدیوں کی تفصیلی رپورٹ جمع کرائی گئی ہے۔

ملک بھر کی جیلوں میں ہزاروں قیدی ایچ آئی وی ایڈز اور دیگر مہلک بیماریوں کا شکار ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں ملک بھر کی جیلوں میں قیدیوں کی حالت زار سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران وفاقی وزیر انسانی حقوق شیریں مزاری کی جانب سے رپورٹ جمع کرائی گئی۔

رپورٹ  میں  میں ہزاروں قیدیوں کے ایڈز سمیت دیگر خطرناک بیماریوں کے شکار ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ملک بھر کی جیلوں میں کل 5189 قیدی انتہائی خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہیں، جن میں سے 425 قیدی ایڈز اور 1832 ہیپاٹائٹس کے مریض ہیں ۔

پنجاب کی جیلوں میں 255 مرد اور 2 خواتین، سندھ میں 115 مرد اور ایک عورت، خیبر پختون میں 39 ، جب کہ بلوچستان کی جیلوں میں 13 قیدی ایچ آئی وی ایڈز کے مریض ہیں۔

اس کے علاوہ پنجاب کی جیلوں میں 290 مرد اور 8 عورتیں ذہنی مرض میں مبتلا ہیں، اس کے علاوہ سندھ میں 50، کے پی میں 235 اور بلوچستان میں 11 قیدی ذہنی مریض ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ملک بھر کی جیلوں میں 65 فیصد سے زیادہ قیدی سزا یافتہ ہی نہیں اور کیسز زیر سماعت ہیں، پنجاب کی جیلوں میں قید 55 فیصد، خیبر پختونخوا میں 71 ، سندھ میں 70 اور بلوچستان میں 59 فیصد قیدیوں کے کیسز کا فیصلہ ہی نہیں ہوا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More