آزادی ایک بڑی نعمت ہے، آزادی کی قدر مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام سے پوچھیں جو مسلسل بھارتی قابض افواج کے مظالم اور غیر انسانی رویوں کا نشانہ بن رہے ہیں، قائد اعظم نے جس خواب کی تعبیر کو حقیقت میں بدلا اس کی سچائی آج پوری طرح عیاں ہے، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز کا یوم آزادی کے حوالے سے تصویری نمائش کی افتتاحی تقریب سے خطاب

اے پی پی  |  Aug 13, 2020

اسلام آباد ۔ 13 اگست (اے پی پی) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ آزادی ایک بڑی نعمت ہے، آزادی کی قدر بھارتی مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام سے پوچھیں جو مسلسل بھارتی قابض افواج کیمظالم اور غیر انسانی رویوں کا نشانہ بن رہے ہیں، قائد اعظم نے جس خواب کی تعبیر کو حقیقت میں بدلا اس کی سچائی آج پوری طرح عیاں ہے کہ مودی سرکار کس طرح بھارت کے اندر رہنے والی اقلیتیوں بالخصوص مسلمانوں کے ساتھ ظلم وجبر کررہی ہے اور کشمیرکی وادی کو 5 اگست 2019 کے بعد عملاًجیل میں تبدیل کردیا گیا ہے، پاکستان کے 74ویں یوم آزادی کے موقع پر قائد اعظم محمد علی جناح کی زندگی ، تحریک پاکستان اورقرارد داد پاکستان کے حوالے سے ڈائریکٹوریٹ آف الیکٹرانک میڈیا اینڈ پبلی کیشن کے زیر اہتمام نایاب تصاویر کی نمائش میں شرکت باعث مسرت ہے پوری قوم کو یوم آزادی کی مبارکباد پیش کرتا ہوں، پاکستان کا قیام ہم پر ہمارے بزرگوں کا ایک احسان ہے اور ہمارا فرض ہے کہ ہم ایک مضبوط اور خوشحال پاکستان اپنی آئندہ نسلوں کیلیے چھوڑ کر جائیں، ہم یہ فرض اپنے بچوں کیلیے ضرور نبھائیں گے اور ملک کو کرپشن اور بدعنوانی سے پاک کرکے رہیں گے، مادر وطن کو مثالی اسلامی فلاحی ریاست مدینہ بنانے کیلئے ہم سب کو کردار ادا کرنا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو وزارت اطلاعات و نشریات کے ذیلی ادارے ڈائریکٹوریٹ آف الیکٹرانک میڈیا پبلی کیشن (ڈیمپ) کے زیر اہتمام یوم آزادی کی مناسبت سے تین روزہ تصویری نمائش کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ ہر سال کی طرح رواں سال بھی و زارتِ اطلاعات ونشریات نے پاکستان کے عوام میں 1947کے جذبہ آزادی کے احیاء کے لیے اس نمائش کا انعقاد کیا جو عظیم رہنماء کے اصولوں اور اعلیٰ تصوارات کی پیروی کی یاد دہانی کراتی ہے ۔ سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ یوم آزادی کے حوالے سے منعقدہ یہ تصاویری نمائش قائد اعظم محمد علی جناح کی فعال قیادت میں دنیا کے نقشے پر ایک نئی اسلامی ریاست کے قیام کے لیے برصغیر کے مسلمانوں کی طویل جدوجہد اور لازوال قربانیوں کی یاد دلاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس نمائش کا ایک بنیادی مقصد یہ بھی ہے کہ یوم آزادی اور قرارداد پاکستان کے حوالے سے نئی نسل کو یہ احساس دلایا جا سکے کہ پاکستان کیوں ہمارے لئے ضروری تھا اور آج بھی تمام مسائل کے باوجود کتنی بڑی نعمت ہے اور اس کے تحفظ ، ترقی و خوشحالی کے لئے ہر کسی کو اپنا کردار نبھانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ 14 اگست کی تاریخ ہمیشہ ہمیں یادلاتی رہے گی کہ برصغیر کے مسلمانوں نے بے شمار مشکلات کے باوجود قائد اعظم محمد علی جنا ح کی قیادت میں اپنی قومی اور مذہبی شناخت کے حصول میں کامیابی حاصل کی جس کی عصر حاضر میں کم ہی مثالیں ملتی ہیں، قائد اعظم محمد علی جناح نے 15 اگست 1947 کو پاکستان براڈ کاسٹنگ سروس کے افتتاح کے موقع پر قوم کے نام پیغام میں فرمایا تھا کہ ” قیام پاکستان نے اس ملک کے شہریوں پر ایک بھاری ذمہ داری عائد کی ہے اور آزادی نے اس قوم کو یہ موقع فراہم کیا ہے کہ وہ دنیا کو دکھا سکے کہ کس طرح ایک کثیر العناصر قوم ذات پات اور عقائد سے بالا تر ہو کر امن اور ہم آہنگی کے ذریعے اپنے تمام ہم وطنوں کی بھلائی کیلئے کام کرسکتی ہے ”۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ قائد اعظم نے جس خواب کی تعبیر کو حقیقت میں بدلا ،اس کی سچائی آج پوری طرح عیاں ہے کہ مودی سرکار کس طرح بھارت کے اندر رہنے والی اقلیتیوں بالخصوص مسلمانوں کے ساتھ ظلم وجبر کررہی ہے اور کشمیرکی وادی کو 5 اگست 2019 کے بعد عملاًجیل میں تبدیل کردیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جشن آزادی کا دن ہمیں بے شمار لوگوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کا موقع فراہم کرتا ہے جنہوں نے آزادی حاصل کرنے میں اور بعد میں اس کے تحفظ کیلئے لازوال قربانیاں دیں، پاکستان کا قیام ہم پر ہمارے بزرگوں کا ایک احسان ہے اور ہمارا فرض ہے کہ ہم ایک مضبوط اور خوشحال پاکستان اپنی آئندہ نسل کیلئے چھوڑ کر جائیں۔ ہم یہ فرض اپنے بچوں کیلئے ضرور نبھائیں گے اور ملک کو کرپشن اور بدعنوانی سے پاک کرکے رہیں گے۔ وزیر اطلاعات نے کہا کہ اگر ہم چاہتے ہیں کہ پاکستان ایک باوقار ملک کے طور پر دنیا کی اقوام میں مقام حاصل کرے تو اس کا صرف ایک ہی راستہ ہے کہ ہم ماضی کی غلط پالیسیوں کو ترک کرکے عالمی سطح پر اپنے آپ کو ایک خود انحصار قوم کے طور پر منوائیں، حکومت اداروں کی مضبوطی پر یقین رکھتی ہیاور قانون کی حکمرانی اور میرٹ کی بالادستی کیلئے پرعزم ہیں ،کورونا صورتحال پر قابو پانے کیلئے سمارٹ لاک ڈاؤن کی پالیسی کامیاب رہی۔ انہوں نے کہا کہ ہم اعلیٰ اقدار کی حامل ایک زندہ اور باشعور قوم ہیں۔ آئیے آج 74 ویں یوم آزادی پر یہ عہد کریں کہ ہم سب اپنی ذمہ داریاں سمجھیں اور نبھائیں گے اور اپنے پیارے وطن کو ترقی اور خوشحالی کی بلندیوں تک پہنچائیں گے اور اسکی حفاظت اور ترقی کیلئے کسی جانی و مالی قربانی سے بھی دریغ نہیں کرینگے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ موجودہ حکومت عمران خان کی دیانتدار قیادت میں معاشی اور سماجی تبدیلیوں کیلئے مخلصانہ کوششوں میں مصروف عمل ہے 14 اگست ناصرف جشن آ زادی منانے کا دن ہے بلکہ آ زاد وطن کے مقاصد کے حصول کے لیے سخت محنت اور جدوجہد کے عزم کا بھی دن ہے، موجودہ حکومت نے نئے پاکستان کا وژن دیکر قومی ترقی و خوشحالی اور میرٹ کی بحالی سمیت خودکوعوام کی فلاح و بہبود کیلئے وقف کردیا ہے کیونکہ ہم سمجھتے ہیں کہ پاکستان کا قیام ہی اسی مقصد کے حصول کیلئے ہوا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ملک کو آج جتنے بھی چیلنجز درپیش ہیں اس کی وجہ ماضی کے حکمرانوں کی غلط پالیساں ہیں جنہوں نے قومی مفاد کو ذاتی مفاد پر ترجیح دی اور ملک و قوم کو آج اس نہج پر پہنچایا۔ ہماری حکومت احتساب کے عمل کو جاری و ساری رکھے گی اور قانون کی بالا دستی کیلئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کرے گی۔آئییآج کے تاریخی اور یاد گار دن پرہم سب اس عزم کا اعادہ کریں کہ پاکستان کو ہر طرح کی بدعنوانی سے پاک کریں گے اورمادر ِ وطن کو مثالی اسلامی فلاحی ریاست مدینہ بنائیں گے۔ انہوں نے اس شاندار نمائش کے انعقاد پر منتظمین کومبارکباد پیش کی تحریک آزادی کے عظیم ہیروز کو خراج تحسین پیش کرنے کے لئے نمائش کے لئے رکھے گئے تاریخی فن پاروں، تحریک پاکستان کے حوالے سے شائع ہونے والی تاریخی کتب وجرائد اور ڈیمپ کی جانب سے ملی نغمے کی دھن پر مرتب کردہ دستاویزی فلم کا بھی معائنہ کیا اور یوم آزادی کا کیک بھی کاٹا۔ اس موقع پر وفاقی سیکرٹری اطلاعا ت و نشریات اکبر حسین درانی، ڈائریکٹر جنرل ڈیمپ عمرانہ وزیر، پرنسپل انفارمیشن آفیسر شاہیرہ شاہد اور وزارت اطلاعات و نشریات کے دیگر سینئر افسران بھی موجود تھے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More