چیئرمین سینیٹ: یوسف رضاگیلانی پی ڈی ایم کے مشترکہ امیدوارنامزد

سماء نیوز  |  Mar 08, 2021

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ نے یوسف رضا گیلانی کو چیئرمین سینیٹ کیلئے مشترکہ امیدوار نامزد کردیا۔ بلاول بھٹو زرداری کہتے ہیں کہ چیئرمین سینیٹ کا الیکشن بھی جیتیں گے۔ یوسف رضا گیلانی کا کہنا ہے کہ سیاسی کارکن ہوں آخری وقت تک لڑوں گا۔ مریم نواز نے حکومت پر اپنے اراکین کو ڈرانے اور دھمکانے کا الزام لگادیا۔

پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی زیرصدارت اجلاس ہوا جس میں سابق صدر آصف زرداری نے ابتدائی کلمات ادا کئے، انہوں نے یوسف رضا گیلانی کو سینیٹ میں کامیابی پر مبارکباد پیش کی۔

چیئرمین سینیٹ کیلئے سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو چیئرمین سینیٹ کا امیدوار نامزد کرنے کی تجویز دی گئی، جس کی مسلم لیگ ن، عوامی نیشنل پارٹی اور پشتونخوا میپ نے حمایت کردی، جس کے بعد پیپلزپارٹی کے سینئر رہنماء کو چیئرمین سینیٹ کا مشترکہ امیدوار نامزد کردیا گیا۔

اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو زردری نے کہا کہ یوسف رضا گیلانی کی جیت سے جمہوری قوتوں کو امید ملی، چیئرمین سینیٹ کا الیکشن بھی جیتيں گے، پیپلزپارٹی، پی ڈی ایم کے روڈ میپ کے ساتھ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سینیٹ میں عددی برتری ثابت کرنے کے چیلنج میں سرخرو ہوئے، سینیٹ اور ضمنی انتخابات کا بائیکاٹ کردیتے تو آج کہاں کھڑے ہوتے؟۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف نے حکومت پر الزام لگایا کہ پی ٹی آئی نے اپنے ارکان کو ڈرایا، دھمکایا اور اغواء کیا، ارکان کو زبردستی گولڑہ سیف ہاؤس میں رکھا گیا۔

چیئرمین سینیٹ کیلئے پی ڈی ایم کے مشترکہ امیدوار یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کا ممنون ہوں، یہ کامیابی ان کے نام کرتا ہوں، کمال حکمت عملی نے حکمرانوں کی دوڑیں لگوادی تھیں، اس کامیابی سے اقتدار کے ایوانوں می لرزہ طاری ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ حکمرانوں کو یہ شکست ہضم نہیں ہورہی، ضمنی انتخابات میں پی ڈی ایم کی جیت جمہوریت کی فتح ہے، سینیٹ الیکشن جیتنے کیلئے حکومتی اراکین اسمبلی کو 50 کروڑ کے فنڈز سے نوازا گیا، میں 242 ووٹوں سے وزیراعظم بنا تھا، عمران خان صرف 4 ووٹوں سے وزیراعظم بنے۔

سابق وزیراعظم اور نومنتخب سینیٹر نے مزید کہا کہ لانگ مارچ سے قبل ہوم ورک ضروری ہے، ناکامی کے متحمل نہیں ہوسکتے، ایک سیاسی کارکن ہوں، لڑوں گا اور آخر تک لڑوں گا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More