برطانوی ہائی کمشنرکےدارالحکومت صاف کرنےسے وسیم اکرم شرمندہ

سماء نیوز  |  May 08, 2021

پاکستان میں تعینات برطانوی ہائی کمشنرکرسچن ٹرنرکی جانب سے مارگلہ ہلزسے خود کچرااٹھانے کی تصاویرسامنے آنے پرسابق کرکٹ کپتان وسیم اکرم نے شرمندگی اورناگواری کا اظہارکیا ہے۔

کرسچن ٹرنرنے چند روزقبل مارگلہ کی پہاڑیوں پرچہل قدمی کرتے ہوئے وہاں پھیلی گندگی اور پلاسٹک بیگز اکھٹے کرتے ہوئے اپنی تصاویر شیئرکی تھیں۔ تازہ ٹویٹ میں انہوں نے اپنی تصویرشیئرکی جس میں وہ کوڑا کرکٹ اور پلاسٹک سے بھرے بیگز اٹھائے کھڑے ہیں، جو انہوں نے صبح کی چہل قدمی کے دوران جمع کیا۔

برطانوی ہائی کمشنر نے کیپشن میں ہیش ٹیگز کے ساتھ لکھا ‘ صفائی نصف ایمان ہے ‘۔

یہ صورتحال دیکھ کر گزشتہ 2 سال سے اہلیہ شنیرااکرم کے ساتھ کراچی کے ساحل سمندرکی صفائی کیلئے سرگرم وسیم اکرم نے اپنی ٹویٹ میں سوال اٹھایا ‘ یہ واقعی شرمناک ہے، ہم کس جانب جا رہے ہیں ؟ ‘۔

سابق کپتان نے ہر ہفتے وہاں کی صفائی کرنے پر کرسچن ٹرنرکاشکریہ بھی ادا کیا اور انہی کی طرح واضح کیا ‘ صفائی نصف ایمان ہے ‘۔

ڈاکٹر ٹرنر نے اسلام آباد کے ڈپٹی کمشنر حمزہ شفقات کو بھی ٹیگ کیا تھا جنہوں نے “زبردست” کہتے ہوئے ہائی کمشنر کی تعریف کی۔

تاہم سوشل میڈیاصارفین نے حمزہ شفقات کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہ ان کی جانب سے کام سے غفلت برتنے کا نتیجہ ہے۔ بعد ازاں شفقات محمود نے واضح کیا کہ انہیں غلط سمجھا گیا۔

انہوں نے لکھا کہ ‘ یہ سراسرغلط فہمی ہے، میں صرف ڈاکٹرکرسچن کی اسلام آباد کو صاف ستھرا رکھنے کی کوششوں کی تعریف کر رہا تھا ‘۔

حمزہ نے مزید کہا کہ میں ہر ایک سے درخواست کروں گا کہ جنگل میں کچرا نہ پھینکیں، اپنے اطراف کو صاف رکھنا ہرایک کی ذمہ داری ہے۔

بعد ازاں ڈی سی اسلام آباد نے یہ بھی بتایاکہ صفائی کرنے والی ٹیموں نے آج (جمعہ) کو 1600 ٹن کچرا اٹھایا۔ انہوں نے اپیل کی کہ برائے مہربانی سب یاد رکھیں کہ صفائی کیلئے ہم سب ذمہ دار ہیں نہ کہ برطانوی ہائی کمشنر۔

سوشل میڈیا صارفین نے اپنے تبصروں میں برطانوی ہائی کمشنر کے اس عمل کو خوب سراہا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More