روس کو تنہا کرنا ضروری ہے، امریکا نے سلامتی کونسل کا اجلاس طلب کرلیا

بول نیوز  |  Jan 29, 2022

یوکرائن کے مسئلے پر بات کرنے کے لیے امریکا نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس پیر کو طلب کر لیا ہے جس کی وجہ روس کا خطرناک رویہ بتایا گیا ہے۔

امریکا کی اقوام متحدہ میں سفیر لنڈا تھامس گرین فیلڈ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایک لاکھ سے زائد روسی فوجی یوکرائن کی سرحد پر موجود ہیں اور روس یوکرائن میں عدم استحکام کی دیگر کارروائیوں میں بھی ملوث ہے جس سے بین الاقوامی امن، دفاع اور اقوام متحدہ کے چارٹر کو واضح خطرہ ہے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق ان کا مزید کہنا تھا کہ 15 رکنی سلامتی کونسل کو چاہیے کہ حقائق پر غور کرے اور روس کے یوکرائن پر حملے کی صورت میں اس بات کو دیکھے کہ یوکرائن، روس اور یورپ کا کیا کچھ داؤ پر لگے گا۔

لنڈا تھامس گرین فیلڈ کا کہنا تھا کہ روسی حملے کے خطرے میں اضافے کی وجہ سے سلامتی کونسل کو بین الاقوامی امن اور سلامتی سے متعلق اہم مسئلے کا سامنا ہے اور اس کی وجہ روس کا یوکرائن کے حوالے سے خطرناک رویہ، سرحدوں اور بیلا روس میں فوج میں اضافہ ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ انتظار کرنے کا وقت نہیں ہے، سلامتی کونسل کو مکمل توجہ دینے کی ضرورت ہے اور ہم پیر کو براہِ راست اجلاس کی امید کر رہے ہیں۔

رومانیہ رپبلک ٹیلیویژن کو انٹرویو میں لنڈا تھامس گرین فیلڈ کا کہنا تھا کہ یہ اجلاس روس کو بے نقاب کرنے کا موقع ہوگا۔ چونکہ روس کے پاس ویٹو پاور ہے اس لیے اسے تنہا کیا جانا اہم ہوگا، اگر سلامتی کونسل نے ایسا کیا تو اس کا مطلب ہوگا کہ ہم روس کے خلاف متحد ہیں۔

واضح رہے کہ سلامتی کونسل کے پانچ مستقل ارکان میں سے ایک کی حیثیت سے روس کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں لائی جانے والی کسی بھی قرارداد پر ویٹو پاور حاصل ہے۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More