الیکٹرانک آرٹس کا آخری فیفا ایڈیشن جو غلطی سے تقریباً مفت ہی بُک گیا

بی بی سی اردو  |  Aug 19, 2022

Getty Images

60 روپے کی چیز صرف چھ پیسے میں مل جائے، ایسا کم ہی ہوتا ہے۔

لیکن ویڈیو گیمز شائقین کو حال ہی میں ایک ایسا سنہری موقع اس وقت ملا جب الیکٹرانکس آرٹس (ای اے) کی ایک نئی ویڈیو گیم کی قیمت تقریبا 99 فیصد کم رکھ دی گئی۔ اس غلطی کی وجہ صرف ایک ہندسہ تھا جس نے 60 ڈالر کی ویڈیو گیم کو چھ سینٹس کا کر دیا۔

ای اے کمپنی کو اپنی اس غلطی کا احساس ہو گیا ہے جس نے فیفا 23 الٹی میٹ ایڈیشن کو انڈیا ایپک گیمز سٹور پر 4800 انڈین روپے کی بجائے صرف چار روپے 80 پیسے قیمت میں ظاہر کیا۔

لیکن اس سے پہلے ہی کئی گیم شائقین آن لائن آرڈر کر چکے تھے۔ ان کے لیے اچھی خبر یہ ہے کہ اب کمپنی نے اعلان کیا ہے کہ وہ ان صارفین کو اسی قیمت پر گیم دے گی جس پر انھوں نے آرڈر کیا تھا یعنی تقریبا 99 فیصد کم قیمت پر۔

اہم بات یہ ہے کہ یہ ویڈیو گیم ای اے سپورٹس کی سب سے زیادہ فروخت ہونے والی فٹ بال سیریز کی آخری ویڈیو گیم ہو گی کیونکہ وہ رواں سال کے آغاز میں اعلان کر چکے ہیں کہ اب وہ فیفا برانڈ کی گیمز نہیں بنائیں گے۔

ای اے سپورٹس ویڈیو کا کہنا ہے کہ اب سے ان کی فٹ بال ویڈیو گیمز ’ای اے سپورٹس ایف سی‘ کے نام سے مارکیٹ میں آئیں گی۔

مئی میں ہونے والے اس اعلان کے ساتھ ہی ای اے سپورٹس اور فیفا کے درمیان 29 سالہ اشتراک اختتام پذیر ہوا جس کی ایک وجہ لائسنس فیس بتائی جا رہی ہے۔ دوسری جانب فیفا نے کہا ہے کہ وہ اب اپنی ویڈیو گیمز جاری کریں گے۔

لیکن اس تازہ ترین ویڈیو گیم کا چرچہ کافی وقت سے ہو رہا تھا جس کی ایک وجہ اس میں خواتین ٹیموں کی شمولیت بتائی جاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

دروغے والا کا ارسلان ایک بار پھر ’ٹیکن کا بادشاہ‘

وار گیمز: فوج کا گیمنگ کے ساتھ گہرا تعلق

کمپیوٹر سپیس اور اس کے بعد کی کہانی: ویڈیو گیمز کی نصف صدی کی تاریخ

ایک ہندسے کی غلطی

فیفا الٹی میٹ ایڈیشن ویڈیو گیمز عام طور پر دیگر گیمز سے زیادہ مہنگی ہوتی ہیں کیونکہ ان میں ایکسٹرا فیچرز ہوتے ہیں جیسا کہ کھلاڑیوں کی خرید و فروخت کی جا سکتی ہے، فیفا کے ایکسٹرا پوائنٹس ملتے ہیں اور باضابطہ ریلیز سے قبل ہی ویڈیو گیم تک رسائی مل جاتی ہے۔

انڈیا میں اس نئے ایڈیشن کی اصلی قیمت 4800 روپے یا 60 امریکی ڈالر تھی جب کہ اسی گیم کا سٹینڈرڈ ایڈیشن 44 امریکی ڈالر کا تھا۔

لیکن اس غلطی کی خبر جنگل میں آگ کی طرح پھیلی اور سوشل میڈیا پر گیم کے فینز نے دنیا بھر میں اسے پھیلا دیا کہ ایپک گیمز انڈیا سٹور پر اسے صرف پانچ سے چھ سینٹس میں خریدا جا سکتا ہے۔

کمپنی کو غلطی کا احساس جلد ہی ہو گیا تھا لیکن اس سے قبل ہی کئی خوش قسمت شائقین اس کا فائدہ اٹھا چکے تھے۔

ایک صارف نے خوشی سے بتایا کہ وہ 25 روپے میں پانچ گیمز خرید چکے ہیں۔

https://twitter.com/MelloHarsh/status/1549983847541903361

رواں ہفتے ای اے سپورٹس اور ایپک گیمز کی جانب سے خریداروں کو ای میل کے ذریعے آگاہ کیا گیا کہ ان کو اسی قیمت پر گیم مہیا کی جائے گی۔

ای اے سپورٹس کی فیفا ٹیم نے تسلیم کیا ہے کہ ایسا ان کی اپنی غلطی کی وجہ سے ہوا۔

واضح رہے کہ فیفا 22 اب تک کا سب سے کامیاب ایڈیشن ثابت ہوا تھا اور اس کے باضابطہ ریلیز کے کچھ ہی دیر بعد ای اے سپورٹس نے بتایا تھا کہ دنیا بھر سے 91 لاکھ کھلاڑی اس کا حصہ بنے اور پہلے ہی ہفتے میں تقریبا 460 ملین میچ کھیلے جا چکے تھے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More