وسیم اکرم ’میچ فکسر‘ کہنے پر ’سوشل میڈیا جنریشن‘ سے ناراض

اردو نیوز  |  Nov 21, 2022

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وسیم اکرم نے ملک کی ’سوشل میڈیا جنریشن‘ پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ انہیں ’میچ فکسر‘ کہتی ہے۔

آسٹریلین ٹی وی شو ’وائڈ ورلڈ آف سپورٹس‘ میں اپنی کتاب کے متعلق بات کرتے وقت دنیا بھر میں ’سوئنگ کے سلطان‘ کہلانے والے سابق فاسٹ بولر کا کہنا تھا کہ ’آپ کو معلوم ہے کہ جب کرکٹ کی دنیا جیسے کہ آسٹریلیا، ویسٹ انڈیز، انگلینڈ، انڈیا میں جب وہ ورلڈ 11 کی بات کرتے ہیں، جب وہ دنیا کے بہترین بولرز کی بات کرتے ہیں تو میرا نام بھی سامنے آتا ہے۔‘

انہوں نے پاکستانی سوشل میڈیا صارفین پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ’لیکن پاکستان میں موجودہ جنریشن، یہ سوشل میڈیا جنریشن وہ ہے جو ہر کمنٹ میں کہتے ہیں کہ یہ میچ فکسر ہے بغیر سمجھے کہ وہ ماجرا تھا کیا۔‘

پاکستان میں 1990 کی دہائی میں سابق فاسٹ بولر عطا الرحمان نے وسیم اکرم پر الزام لگایا تھا کہ انہوں نے انہیں (عطا الرحمان کو) میچ فکسنگ کے لیے پیسوں کی پیشکش کی تھی۔

انہی دنوں کچھ ایسی افواہیں بھی گردش کرتی رہی تھیں کہ وسیم اکرم نے 1996 کے کرکٹ ورلڈ کپ میں انڈیا کے خلاف کوارٹر فائنل سے قبل انجری کا بہانہ بناکر اہم میچ نہیں کھیلا تھا۔

Wasim Akram "In Australia, West Indies, England and India when they talk about one of the best bowlers in the world my name pops up. But in Pakistan this social media generation they call me a match-fixer" (courtesy Wide World of Sports) #Cricket pic.twitter.com/0pNjQHK35W

— Saj Sadiq (@SajSadiqCricket) November 20, 2022

یہ تمام الزامات کبھی بھی ثابت نہ ہوسکے اور عطا الرحمان پر پاکستان کی جانب سے تاحیات پابندی لگا دی گئی تھی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More