انڈین ریاست تری پورہ میں مساجد پر حملے، سکیورٹی فورسز تعینات

اردو نیوز  |  Oct 28, 2021

بنگلہ دیش میں ہندوؤں کے خلاف ہونے والے پرتشدد واقعات کے نتیجے میں انڈیا کی شمال مشرقی ریاست تری پورہ میں دائیں بازو کی جماعتوں کی جانب سے مسلمانوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے جس کے بعد مسجدوں کی حفاظت کے لیے سکیورٹی فورسز کو تعینات کردیا گیا ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق حکام نے ریاست کے شمالی حصوں میں حالات کشیدہ ہونے کے باعث چار سے زیادہ افراد کے اکٹھا ہونے پر پابندی عائد کردی ہے، جبکہ پولیس نے اشتعال انگیز پیغامات پھیلانے والوں کو خبردار کیا ہے۔

ریاست تری پورہ کی بنگلہ دیش کے ساتھ 850 کلو میٹر طویل سرحد ہے۔

خیال رہے کہ رواں ماہ بنگلہ دیش میں ایک مندر میں توڑ پھوڑ کے واقعے کے ردعمل میں سات افراد ہلاک ہوئے تھے۔

ایک ہندو تہوار کے دوران اس مندر میں ہونے والی تقریب میں ہندو دیوتا کے گھٹنے پر قرآن رکھا گیا تھا جس کی ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد بنگلہ دیش کے 12 اضلاع میں فسادات شروع ہوگئے تھے۔

ریاست تری پورہ میں انتہا پسند وشوا ہندو پریشد گروہ کی ریلی کے دوران چار مساجد اور مسلمانوں کی دکانوں اور گھروں کی توڑ پوڑ کی گئی تھی جس پر حکومت نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔ 

خیال رہے کہ ریاست تری پورہ میں وزیراعظم نریندر مودی کی جماعت بھارتیا جنتا پارٹی کی حکومت ہے۔

انڈین حکومت نے تری پورہ میں ہونے والے حملوں پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

 

 

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More