سٹیٹ بینک کے زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی، چھ ارب 71 کروڑ ڈالر رہ گئے

اردو نیوز  |  Dec 09, 2022

سٹیٹ بینک آف پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر میں  دو دسمبر تک مزید 78 کروڑ 40 لاکھ ڈالر کی کمی ہوگئی جس کے بعد اس کے پاس موجود ذخائر چھ ارب 71 کروڑ ڈالر رہ گئے۔

جمعرات کو پاکستان کے مرکزی بینک کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق ذخائر میں کمی کی وجہ پاکستان کی جانب سے سکوک بانڈ کی ایک ارب ڈالر اور کچھ غیر ملکی قرض کی ادائیگی ہے۔

تاہم اس کمی کسی حد تک پچاس کروڑ ڈالر نے پورا کیا جو پاکستان کو ایشین انفراسٹرکچر انویسٹمنٹ بینک [اے آئی آئی بی) نےگزشتہ ہفتے ادا کیے۔ دوسری طرف کمرشل بینکوں کے ذخائر 5.87 ارب ڈالر رہے اوراس طرح ملک میں مجموعی زرمبادلہ کے ذخائر 12 ارب 58 کروڑ رہ گئے ہیں۔

اس سے قبل ملکی زرمبادلہ ذخائر 25 نومبر کو ختم ہونے والے ہفتے میں 26 کروڑ 68 لاکھ ڈالر کم ہوئے تھے اور کل ملکی زرمبادلہ ذخائر 25 نومبر تک 13 ارب 37 کروڑ ڈالر تھے۔

سٹیٹ بینک کے ذخائر اس ہفتے 32 کروڑ 70 لاکھ ڈالر کم ہو کر 7 ارب 49 کروڑ ڈالر رہ گئے تھے۔

18 نومبر کو ختم ہونے والے ہفتے کے دوران اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر میں مزید 13 کروڑ 40 لاکھ ڈالر کی کمی ہوئی تھی جس کے بعد اس کے پاس موجود ذخائر 7 ارب 80 کروڑ ڈالر رہ گئے تھے۔

ماہرین کے مطابق  ذخائر کی کمزور پوزیشن شرح تبادلہ پر منفی اثر ڈالتی ہے جب کہ انٹربینک مارکیٹ میں  ڈالر کی قدر میں بھی کچھ اضافہ ہو رہا ہے۔

سٹیٹ بینک کی جانب سے فراہم کردہ انٹربینک ریٹ، ایکسچینج کمپنیوں کی جانب سے جاری کردہ ریٹ سے نمایاں طور پر کم ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More