ہیومن رائٹس واچ کی مقبوضہ کشمیر میں بھارتی کارروائیوں کی مذمت

ہم نیوز  |  Oct 30, 2020

سری نگر: ہیومن رائٹس واچ (ایچ آر ڈبلیو) نے مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی بزدلانہ کارروائیوں کی مذمت کی ہے۔

ایچ آر ڈبلیو کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں این جی اوز کے دفاتر، کارکنان کے گھروں پر چھاپے مارے گئے، بھارتی تحقیقاتی ایجنسی نے مقبوضہ کشمیر میں اخبار کے دفتر پر بھی چھاپا مارا۔

یہ بھی پڑھیں: 

ہیومن رائٹس واچ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی چھاپے بی جے پی کے کریک ڈاؤن کا حصہ ہیں۔

ایچ آر ڈبلیو نے مطالبہ کیا کہ بھارت کشمیریوں اور دیگر انسانی حقوق کے گروپس کے خلاف غیرقانونی آپریشن روکے۔

دوسری جانب پاکستان نے بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں زمینی ملکیت کے قوانین میں غیرقانونی ترمیم کو مسترد کردیا ہے۔

ترجمان دفترخارجہ زاہد حفیظ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت کی جانب سے کشمیرمیں زمینی ملکیت کی قوانین میں تبدیلی قابل مذمت ہے۔ کشمیر میں زمینی ملکیت میں تبدیلی سلامتی کونسل کی قراردادوں کےخلاف ہے۔

یہ بھی پڑھیں: 

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق زمینی ملکیت کے قوانین میں تبدیلی پاکستان اور بھارت کے درمیان دو طرفہ معاہدوں کی بھی خلاف ورزی ہے۔ مسئلہ کشمیرعالمی قوانین کے تحت عالمی سطح پر تسلیم شدہ تنازعہ ہے۔

ترجمان کے مطابق 5 اگست 2019 کے بھارتی اقدامات اور ڈومیسائل قانون میں تبدیلی کا مقصد کشمیر کے آبادیاتی ڈھانچے کو تبدیل کرنا ہے۔ کشمیر کے آبادیاتی ڈھانچے میں تبدیلی کا مقصد کشمیریوں کو ان کی اپنی سرزمین پر اقلیت میں تبدیل کرنا ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More