سندھ میں لاک ڈاؤن، 'جنگ ڈنڈے سے نہیں جیتی جاسکتی'

اردو نیوز  |  Mar 23, 2020

وزیراعظم پاکستان عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت سندھ کے لاک ڈاؤن سے متفق نہیں ہے۔ ڈنڈے کے زور پر عوام کی مرضی کو بائی پاس کر کے جنگ نہیں جیتی جا سکتی۔

پیر کو اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا مزید کہنا تھا کہ چاروں صوبوں، گلگت بلتتستان اور وفاقی دارالحکومت کی جانب سے درخواست کے بعد ان کو اختیار دیا جا رہا ہے کہ وہ ضرورت کے وقت فوج کو طلب کر سکیں۔

ان کے مطابق 'وزیراعظم نے سمری پر دستخط کر دیے ہیں جسے جلد کابینہ میں پیش کر دیا جائے گا۔'

مزید پڑھیںلاک ڈاؤن میں کیا نہیں کرنا؟Node ID: 466431فوج کو کورونا کی روک تھام کے لیے تیار رہنے کا حکمNode ID: 466531پاکستان میں کورونا سے اب تک چھ ہلاکتیں، کل کیسز 803Node ID: 466546ان کا کہنا تھا کہ صوبوں کے پاس جزوی لاک ڈاؤن کا آپشن موجود ہے لیکن وہ کرفیو نہیں ہے، لوگوں کو زبردستی محدود نہیں کیا جا سکتا۔

انہوں نے ایم کیو ایم کے کابینہ میں شامل ہونے پر اسے مبارک دیتے ہوئے کہا کہ چیلنجز سے مل کر مقابلہ کیا جائے گا۔

انہوں نے وزیراعظم کے خطاب پر تنقید کرنے والوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ ’کورونا کو سیاست میں زندہ رہنے کا ذریعہ نہ بنائیں۔‘

ان کا مزید کہنا تھا کہ بیرون ملک خود ساختہ قرنطینہ میں رہنے والے کورونا پر سیاسی دکان داری چمکانے سے پرہیز کریں۔

’وقت کا تقاضا ہے کہ سیاسی اختلافات کو قرنطینہ میں ڈال کر چیلنج کا مقابلہ کیا جائے۔‘

وزیراعلی سندھ نے اتوار کو صوبے میں 15 روزہ لاک ڈاؤن کا اعلان کیا تھا (فوٹو: ٹوئٹر)معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ 23 مارچ تجدید عہد کا دن ہ،ے آج ثابت ہو گیا کہ قائداعظم کا دو قومی نظریہ بالکل درست تھا۔ ’پڑوسی ملک میں مسلمانوں کے ساتھ جو ہو رہا ہے وہ سب کے سامنے ہے۔‘

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کورونا خطرناک ضرور ہے لیکن جان لیوا نہیں۔

’میڈیا صحت مند ہونے والے افراد کے حوالے سے رپورٹس چلائے تاکہ لوگوں کا حوصلہ بڑھے۔'

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More