امریکہ ہار گیا

روزنامہ اوصاف  |  Aug 13, 2020

امریکہ نہیں چاہتا کہ کوئی ملک کسی بھی طرح اس سے آگے نکل سکے۔ ماضی میں اس کی جنگ سوویت یونین سے تھی۔ برفانی ریچھ ہر طرف اور ہرطرح امریکہ سے آگے نکلنے کی کوشش کرتاتھا، امریکہ کویہ بات پسند نہیں تھی۔ سوویت یونین گرم پانی تک رسائی حاصل کرنے کی جلدبازی میں افغانستان پر چڑھ دوڑایہی اس کی گردن کاپھندا بن گیا۔  امریکہ جو تاک میں تھا اس نے اپنے حریف پاکستان کی کمر پرہاتھ رکھ کر کہا چڑجابیٹا سولی پر اسے روس کے مقابل دھکیل دیا۔پاکستان کی جری بہادرفوج  نے سوویت یونین جیسی سپر پاور کو خاک چٹادی اس کوافغانستان سے مار بھگایا۔ امریکہ نے موقع سے بھرپور فائدہ اٹھاتے ہوئے سوویت یونین کوبکھیر کرٹکڑے ٹکڑے کردیا۔ اپنے ایک مضبوط مدمقابل کو خاک چاٹنے پرمجبور کردیا۔ اس فتح سے امریکہ کی قوت میں اضافہ ہو گیا وہ اکیلا سپر پاور بن گیا اس نے اپنے گھمنڈ میں نیوورلڈآرڈر نافذ کر دیالیکن وہ ایک نئی ابھرتی ہوئی قوت چین کواہمیت نہ دے کر دنیا کواپنے زیر نگین کرنے کی حوس میں مبتلا ہو گیا۔  چین جوخاموشی سے قدم بقدم آگے بڑھ رہاتھا وہ خاموشی سے اپنی منزل پانے میں لگارہا اسے اس سے غرض نہیں تھی امریکہ کیا کررہاہے، روس کیاکررہاہے پھروہ بڑی خاموشی سے امریکی سپرپاور کے مدمقابل خم ٹھونک کرمیدان میں اترآیاتھا۔ چین نے معاشی اقتصادی تکنیکی دوڈ میں جوہری قوت میں اپنے آپ کومنوالیا تب امریکہ کی آنکھیں کھلیں اب جبکہ چین نے پوری طرح پرپرزے نکال لے تو امریکہ اسے اپنے دبائو میں رکھنے  کی ہرطرح کوشش کرتارہا لیکن چین ہر محاذ پر امریکہ کے سامنے پوری قوت سے جم کے کھڑا رہا ۔ چین نے اپنااثررسوخ دنیا میں بڑھانے کے لئے امریکہ کی ہی مانند سر مایہ کاری شروع کردی۔ اس سے امریکی یہودی جو دنیا کی معاشی صورت حال پر قابض تھا وہ امریکہ کی پشت پررہتے ہوئے دنیا بھر کے مما لک کوقرضوں میں جکڑ کر امریکہ کے قدموں میں ڈالنے کاکام کرتاہے کوتب فکر ہوئی جب چین نے بھی دنیا کے کئی ملکوں میں سرمایہ کاری شروع کردی اس طرح چین نے خصوصاً ایسے ممالک جو امریکہ کے اہم حلیف ہیں کو اپنے نشانے پرلے کر انہیں اپناحلیف بنانے کی ترکیب استعمال کی۔ ان ممالک کوہرطرح سے سہولیات فرہم کیں۔ چین بتدریج امریکہ کو کمزور کررہاہے۔ چین نے بہت سوچ سمجھ کر پاکستان جوپہلے ہی چین کادوست تھاجوامریکہ کا بھی اہم حلیف  ہے پر بڑی حد تک انحصار کرتاہے کو اپنی حکمت عملی کے لئے منتخب کیا۔ پاکستان جو امریکہ کاایک اہم حلیف ہی نہیں بلکہ دست نگر بھی ہے کو امریکی چنگل سے نکال کر اپنے قبضے میں کرنے کی مہم جوئی اور اپنے اہم مفادات حاصل کرنے کے لئے پاکستان میں بڑی سر مایہ کاری پاک چین راہداری کے طور پر کی ہے۔ اس کے علاوہ اور کئی منصوبے روبعمل ہیں۔ امریکہ پاکستان سے اس بناء پر ناراض ہوگیا ہے کہ اس کی سرپرستی سے نکلنے کی مذموم کوشش کیوں کی جارہی ہیں۔ اس باعث امریکہ پاکستان کے ازلی دشمن بھارت جو امریکیوں کے لئے بڑی مارکیٹ بھی ہے اور چین سے اس کی سرحد ملتی بھی ہے امریکہ چین کی حمایت کی وجہ سے پاکستان پر اپنازیادہ دبائو نہیں بڑھارہا بلکہ اپنے حلیف سعودی عرب کو قربانی کابکرا بنا کر آگے کردیا ہے۔  امریکہ سمجھتاہے کہ پاکستان پرسعودی حکومت کے بہت سے احسانات ہیں اس لئے اگر سعودی حکمران خصوصاً ولی عہد اگر کوئی بات کہیں گے توپاکستان سرکار کو بصد مجبوری مانا پڑے گی شاید اسی سبب دبائو بڑھانے کے لئے ایران، ترکی، ملائیشیا، قطر، چین سے تعلقات نہ رکھے جانے کامطالبہ اور سعودی جن سے ناراض ہیں ان سے پاکستان بھی خوشگوار تعلق نہ رکھنے کا مطالبہ کردیا۔ امریکہ خوب اچھی طرح سمجھتاہے کہ پاکستان ہی کیا تمام عالم اسلام کیلئے سعودی عرب کی کیا اہمیت ہے۔ مسلمانوں کے تمام اہم مقامات مقدسہ  وہیں ہیں۔ دنیابھرسے ہرسال پندرہ سے بیس لاکھ لوگ حج کافریضہ ادا کرنے وہاں جاتے ہیں۔ تمام سال عمرے کے لئے لاکھوں افراد سعودی عرب جاتے ہیں اس لئے کوئی بھی سعودی عرب کوکسی طرح ناراض کرناپسند نہیں کرے گا۔ پاکستان سے بھی دولاکھ حاجی اور تین سے پانچ لاکھ افراد عمرہ کرنے جاتے ہیں۔ اس سبب امریکہ نے سعودی عرب سے پاکستان پر دبائو ڈالا کہ ناصرف چین سے بلکہ ان تمام ملکوں سے جن سے سعودی ناراض ہیں قطع تعلق کرلیاجائے۔ خاص طور سے چین کامنصوبہ پاک چین راہداری روک دیاجائے۔ پاکستان نے جب یہ مطالبہ نہیں تسلیم کیا توسعودی ولی عہد نے اپنی ناراضگی ظاہرکرتے ہوئے انہوں  نے جو رقم سود پر قرض دی تھی اس کی فوری واپسی کا مطالبہ کردیا۔ اس سلسلے میں چین نے فوری ضرورت کومحسوس کرتے ہوئے سعودی عرب کوواپس کرنے کے لئے پاکستان کوایک ارب ڈالر فراہم کردے ۔اس طرح سعودی امریکی منصوبہ ناکام کردیاگیا۔ بات یہیں تک نہیں رکے گی ابھی پاکستان ان کا بہت مقروض ہے اس کے علاوہ بھی ان کے پاس دبائو ڈالنے کے لئے ایران کی طرح حج اور عمرہ پر پاکستانی معتمرین پرپابندی کاحربہ بھی استعمال کیا جاسکتاہے  اس طرح حکومت پر عوام کادبائو آسکتاہے۔  مسلمانوں کو آپس میں لڑواناکلیسا کاہمیشہ سے وطیرہ رہاہے اس بار اپنی سازش کے لئے مسلمانوں کے مقدس ترین مقامات والے ملک کو اپناآلہ کار بنایاہے۔ امریکہ چین سے اپنی جنگ پاکستان کے کندھے پر پاکستان کے میدان میں لڑناچاہتا ہے جیسا اس نے سوویت یونین کے ساتھ کیاتھا لیکن اب وہ نہ حکمران ہے نہ ہی وہ وقت ہے اور اب تو پاکستان بھی ایٹمی قوت والا ملک ہے۔ پاکستان نے امریکی سازش جواس نے سعودی عرب کواستعمال کرکے کی تھی اسے چین کے توسط سے ناکام بنادیا ہے۔ 
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More