کوئٹہ سریناچوک دھماکا:90کلودھماکاخیزمواد استعمال ہوا

سماء نیوز  |  Apr 22, 2021

کوئٹہ: دھماکے کے بعد کا منظر

بم ڈسپوزل اسکواڈ کا کہنا ہے کہ کوئٹہ کے سرینا ہوٹل میں ہونے والے بم دھماکے میں 80 سے 90 کلو دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا۔ بی ڈی ٹیم کے مطابق دھماکے میں بال بیرنگ کے علاوہ انتہائی حساس آتش گیر کیمیکل سی فور کا بھی استعمال کیا گیا تھا۔

کوئٹہ کے سرینا ہوٹل کی پارکنگ میں ہونے والے بم دھماکے کی نوعیت سے متعلق ابھی تک پولیس کسی نتیجے پر نہیں پہنچی سکی۔ تاہم ابتدائی تحقیقات میں معلوم ہوا ہے کہ دھماکا بارود سے بھری گاڑی کے ذریعے کیا گیاْ۔ بی ڈی ٹیم کے مطابق دھماکے میں 80 سے 90 کلو گرام بارودی مواد، بال بیرنگ اور لوہے کے ٹکڑے استعمال کئے گئے۔

بی ڈی ٹیم کی رپورٹ کے مطابق دھماکے میں انتہائی حساس اور آتش گیر کیمیکل سی فور استعمال کیا گیا، جس سے دھماکے کے فوری بعد آگ بھڑک اٹھی۔

بلوچستان پولیس کے ترجمان کے مطابق دھماکا خودکش ہوسکتا ہے۔ حملہ آور گاڑی میں موجود تھا جس نے ممکنہ طور پر سیکورٹی انتظامات کی وجہ سے ہوٹل کے اندرونی حصے میں داخل ہونے میں خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ تاہم ترجمان کا کہنا ہے کہ اصل حقائق مکمل تحقیقات کے بعد ہی معلوم ہوسکیں گے۔

پولیس کی جانب سے ہوٹل کی جانب سے لگائے گئے سی سی ٹی وی فوٹیجز بھی حاصل کرلی گئی ہے۔

واضح رہے کہ ہوٹل میں ہونے والے کار بم دھماکے میں 5 افراد جاں بحق اور 12 زخمی ہوئے۔ جاں بحق چار افراد کی شناخت ہوگئی ہے۔

جاں بحق افراد میں پولیس اہلکار شجاعت عباسی، ہوٹل کے سیکیورٹی انچارج شاہ زیب، یوسفزئی اور نجی سیکیورٹی گارڈ اسد اللہ بھی شامل ہیں۔ جاں بحق ہونے والے ایک شخص کی شناخت ایمل کاسی کے نام سے ہوئی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More