پیٹرول کی قلت، امریکہ کی17ریاستوں میں ایمرجنسی نافذ

ہم نیوز  |  May 11, 2021

وائٹ ہاوَس نے پیٹرول کی قلت کے باعث امریکہ کی17ریاستوں اورڈسٹرکٹ آف کولمبیا میں ہنگامی حالت کا اعلان کر دیا ہے۔

سرکاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پیڑول کی قلت کی وجہ سےہنگامی حالات کاسامنا ہے۔ ان علاقوں میں  ہیٹرول کی 45 فیصد سپلائی امریکہ کےمشرقی ساحل سے کی جاتی ہے۔

بتایا جا رہا ہے کہ نیویارک میں گیس ،جیٹ فیول اوردوسری پیڑولیم پروڈیکٹ کی کمی  ہوگئی ہے۔ گیس کی قیمتی بھی بڑھ رہی ہیں اگر کلونیل پائپ جلدبحال نہ ہوئی توتیل کا بحران پیدا ہوسکتا ہے۔

خیال رہے کہ9مئی کو نامعلوم ہیکرز کی جانب سے غیر معمولی سائبر حملے کے بعد امریکہ کی فیول پائپ لائن آپریٹر کالونیل پائل لائن نے خلیجی ساحل سے ریاست ہائے متحدہ کے مشرقی اور جنوبی حصے کو رسد روک دی تھی۔

اس پائپ لائن کے زریعے ساڑھے 5 ہزار میل تک نیوجرسی اور ٹیکساس کے درمیان روزانہ 100 ملین تیل پہنچایا جاتا ہے۔

تیل کی سپلائی متاثر ہونے کے نتیجے میں نیو یارک کی آئل مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتیں متاثر ہوئی ہیں۔

یہ کمپنی ہر روز 25 لاکھ بیرل پٹرول، ڈیزل، جیٹ فیول اور پٹرولیم کی دیگر تیار اشیا کم و بیش ساڑھے 5 سو میل کے فاصلے تک پائپ لائنز کے ذریعے پہنچاتی ہے اور مشرقی ساحل کی 45 فیصد رسد گاڑیوں کے ذریعے پہنچاتی ہے۔

سائبر حملے کا علم ہونے کے بعد کالونیل پائپ لائن نے اپنے سسٹم بند کردیے تاکہ حملے کے اثرات کو محدود رکھا جا سکے۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ سائبر حملے سے کچھ سرگرمیاں روکنا پڑی ہیں اور چند آئی ٹی سسٹم بھی متاثر ہوئے ہیں۔

ایک سابق سرکاری افسر نے بتایا کہ سائبر حملہ کرنے والے ہیکرز غیر معمولی مہارت کے حامل سائبر کرمنل گروپ سے تعلق رکھتے ہیں۔

تحقیقات کرنے والے دیکھ رہے ہیں کہ اس حملے میں کہیں ‘‘ڈارک سائڈ’’ نامی گروپ تو ملوث نہیں۔

رینسم ویئر ایک خصوصی میل ویئر (وائرس) ہے جو کسی بھی سسٹم میں داخل ہوکر اسے مقفل کرنے کا عمل شروع کرتا ہے۔ ایسا نہ کرنے کے عوض یہ سوفٹ ویئر کچھ رقم مانگتا ہے

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More