سمندری طوفان ٹاکٹے: محکمہ موسمیات نے پانچواں الرٹ جاری کر دیا

ہم نیوز  |  May 16, 2021

جنوب مشرقی بحیرہ عرب میں ہوا کا کم دباؤ طوفان میں تبدیل ہوگیا جس کے باعث کراچی سمیت سندھ کے مختلف شہروں میں بارش کا امکان ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق بحیرہ عرب میں اٹھنے والا سمندری طوفان ٹاکٹے کراچی سے 1310 کلومیڑ کی دوری پر ہے اور 18 کلو میٹر کی رفتار سے بھارتی ریاست گجرات کی جانب بڑھ رہا ہے۔

سمندری طوفان کے پیش نظر محکمہ موسمیات نے پانچواں الرٹ جاری کردیا ہے۔ سمندری طوفان کے باعث 18 سے  20 مئی تک کراچی سمیت سندھ کے مختلف شہروں میں تیز ہواؤں کے ساتھ بارشیں متوقع ہیں۔

محکمہ موسمیات کے مطابق ہوا کا کم دباؤ بحیرہ عرب کے جنوب مشرق میں موجود ہونے سے کراچی میں 17 مئی تک گرمی کی شدت برقرار رہے گی۔ ہواؤں کا رخ تبدیل ہونے کی صورت میں سمندری طوفان بھارت کی جانب بڑھ جائے گا۔

محکمہ موسمیات کے مطابق سمندری ہوائیں معطل رہنے کی وجہ سے ماہی گیروں کے لیے 16  سے 20 مئی کا عرصہ خطرناک قرار دیا گیا ہے۔

بحیرہ عرب میں سمندری طوفان”ٹاکٹے” کی پیش رفت کے بعد سندھ حکومت کی ممکنہ اثرات سے نمٹنے کے لیے مشاورت جاری ہے۔  وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کراچی میں  بل بورڈز ہٹانے، ایمرجنسی  پلان ٹیم بنانے اور  کنٹرول روم قائم کرنے کی ہدایت کردی ہے۔

بحیرہ عرب میں سمندری طوفان”ٹاکٹے”کی صورتحال پر غور کے لئے وزیراعلیٰ سندھ کی زیرصدارت اجلاس ہوا۔ محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سردار سرفراز  نے بتایا کہ اگر سائیکلون گجرات  کو عبور کرتا ہے تو ٹھٹھہ، بدین، میرپورخاص، عمر کوٹ اور سانگھڑ اضلاع   میں طوفانی بارشیں ہوسکتی ہیں۔

مزید پڑھیں: 

انہوں نے کہا کہ اگر طوفان  کراچی کے غربی علاقے  کو عبور کر جاتا ہے تو کراچی، حب، لسبیبلہ ، حیدرآباد اور جامشورو میں  بارشیں ہوں گی۔

اگر طوفان  گجرات،انڈیا سے ٹکراتا ہے  تو تھر کے علاقے  میں شدید بارشیں ہوں گی۔

دوسری جانب ٹھٹھہ ،سجاول اوربدین سمیت سندھ کےکئی علاقوں میں متوقع سمندری طوفان کے پیش نظرانتظامیہ کی جانب سے الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔

ممکنہ سمندری طوفان کے پیش نظر ضلع سجاول میں  ڈپٹی کمشنر آفس میں کنٹرول روم قائم کر کیا گیا۔ ضلع بھر میں افسران  کی چھٹیاں منسوخ کردی گئی ہیں جبکہ ساحلی تحصیلوں جاتی شاہ بندر اور کھاروچھان میں  ہنگامی بنیادوں پراقدامات کی ہدایت کردی گئی۔

انتظامیہ کی ہدایت پر ماہی گیروں نے کشتیاں ساحل پر لنگر انداز کردی ہیں۔ ساحلی علاقوں کی بستیوں کے مکینوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنے کی ہدایات دی گئی ہیں۔

ٹھٹھہ میں ماہی گیروں کے سمندر میں جانے اور شکار کھیلنے پر پابندی لگادی گئی۔  ریونیو، پبلک ہیلتھ اورپولیس سمیت 13 محکموں کو الرٹ کردیا گیا۔

دریں اثنا بحیرہ عرب میں سمندری طوفان سے متعلق این ڈی ایم اے کی جانب سے الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔

این ڈی ایم اے کے مطابق اگرہوا کی رفتار 47-34 کٹس ہوتی ہے تو گھروں کی چھتوں اور فصلوں کو نقصان ہوگا۔ اگر سائیکلون انڈیا گجرات کو عبور کرتا ہے تو ٹھٹھہ ، بدین ، عمر کوٹ اورسانگھڑ ڈسٹرکٹ پراثرات ہوں گے۔ ٹھٹھہ ، بدین میرپورخاص، عمر کوٹ ، تھرپارکر اور سانگھڑ میں بھی بارشیں ہوں گی۔

این ڈی ایم اے کے مطابق ٹھٹھہ اور دیگر ضلعوں میں 100-80 کلومیٹر پی ایچ طوفانی بارشیں ہو سکتی ہیں۔ کراچی، حب، لسبیبلہ ، حیدرآباد اورجامشورو میں بھی بارشیں ہوسکتی ہیں۔ اگر گجرات کو ہٹ کرتا ہے تو تھر کے ایریا میں شدید بارشیں ہوں گی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق  سائیکلون میں آئندہ 12 گھنٹوں میں مزید شدت آنے کا امکان ہے، جس کے باعث کیرالہ، کرناٹکا، تامل ناڈو، گجرات اور مہاراشٹرا میں ہنگامی انتظامات کیئے گئے ہیں۔ طوفان کے زیرِ اثر ریاستوں میں پچاس سے زائد ٹیمیں تعینات کی گئی ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق شدید بارشوں سے سیلابی صورتِ حال اور لینڈ سلائیڈنگ کا خطرہ ہے۔ اب تک کیرالہ کے ریڈ اور اورنج الرٹ والے علاقوں سے تین سو سے زائد افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More