سوڈان: وزیراعظم حمدوک کی بحالی کے بعد بھی عوامی مظاہرے جاری

بول نیوز  |  Nov 25, 2021

دارالحکومت خرطوم میں آج ہزاروں سوڈانی عوام فوجی آمریت کے خلاف پھر سڑکوں پر آگئے۔ آج کے مظاہرے کیلیے عوام نے سوشل میڈیا پر ’’یومِ شہدا‘‘ کے نام سے کال دی تھی۔

فوجی آمریت کے خلاف احتجاج کرنے والے 42 شہری فوج سے جھڑپوں کے دوران جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے۔

مظاہرین نے وزیراعظم عبداللہ حمدوک اور فوجی حکام کے مابین طے پائے معاہدے کو بھی مسترد کردیا جس کے نتیجے میں گزشتہ اتوار عبداللہ حمدوک کو عہدے پر بحال کردیا گیا تھا۔ مظاہرین نے اس معاہدے کو وزیراعظم عبداللہ حمدوک کی غداری قرار دیا ہے۔

دوسری جانب وزیراعظم حمدوک کا کہنا ہے کہ انہوں نے فوج سے سمجھوتہ خون ریزی سے بچنے کیلیے کیا۔ وزیراعظم عبداللہ حمدوک کے مطابق معاہدے میں واضح طور پر درج ہے کہ ملک میں جولائی 2023 میں آزادانہ اور شفاف انتخابات کرائے جائیں گے۔

سوڈانی فوج کے سربراہ جنرل عبدالفتح البرہان نے گزشتہ ماہ کی 25 تاریخ کو اقتدار پر قبضہ کرکے وزیراعظم عبداللہ حمدوک کو نظربند کردیا تھا مگر عالمی دباؤ اور بڑے عوامی احتجاج کے باعث گزشتہ اتوار عبداللہ حمدوک کو دوبارہ وزیراعظم کے عہدے پر بحال کردیا گیا تھا۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More