عام سولر پینلز پر نینو تاروں کے اضافے نے کارکردگی دُگنی کردی

بول نیوز  |  Nov 25, 2021

ناروے کے سائنسدانوں نے عام سولر پینل پر گیلیم آرسینائیڈ والی نینو تاروں کا اضافہ کرکے اس کی کارکردگی دگنی کرنے میں کامیابی حاصل کر لی ہے۔ یعنی وہ مساوی رقبے والے عام سولر پینل کے مقابلے میں دگنی بجلی بنا سکتا ہے۔

واضح رہے کہ گیلیم آرسینائیڈ سے تیار کردہ، نینومیٹر جسامت والی تاریں یعنی ’گیلیم آرسینائیڈ نینو وائرز‘ مائیکرو پروسیسر بنانے میں عام استعمال ہورہی ہیں۔

ان کی شمولیت سےسولرسیلز اور سولرپینلز کی لاگت میں معمولی اضافہ ضرور ہوگا لیکن ساتھ ہی ساتھ ان کی کارکردگی بھی دگنی ہوجائےگی جو اس اضافے کا ازالہ کردے گی۔

تجارتی پیمانے پر دستیاب سلیکان سولر پینلز کی کارکردگی 15 سے 18 فیصد کے درمیان ہوتی ہے جو گیلیم آرسینائیڈ نینو وائرز کی اضافی پرت شامل ہوجانے کے بعد 30 سے 36 فیصد تک ہوجائے گی۔

دگنی کارکردگی کا مطلب یہ ہے کہ مطلوبہ بجلی بنانے کےلیے سولر سیل/ سولر پینل کا مطلوبہ رقبہ بھی آدھا رہ جائے گا۔

اس طرح گھروں کی چھتوں کے علاوہ کھڑکیوں اور اپارٹمنٹس کی بالکونیوں میں بھی چھوٹے سولر پینل لگا کر زیادہ بجلی بنائی جاسکے گی۔

سولر سیل کی کارکردگی بڑھانے کی یہ نئی اور کم خرچ تکنیک ’’نارویجیئن یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی‘‘ کے انجان مکھرجی اور ان کے ساتھیوں نے وضع کی ہے جسے مختصر پیمانے کے تجربات میں کامیابی سے آزمایا جاچکا ہے۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More