قانونی مشیروں کا حمزہ شہباز کو استعفیٰ نہ دینے کامشورہ

سماء نیوز  |  May 17, 2022

قانونی مشیروں نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے پیش نظر وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کو فوری استعفیٰ نہ دینے کا مشورہ دے دیا۔

منحرف اراکین کے معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد حمزہ شہباز نے آئینی ماہرین سے مشاورت کےلیے اجلاس طلب کیا تھا۔

اجلاس میں قانونی مشیروں نے حمزہ شہباز کو فوری استعفیٰ نہ دینے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ فیصلے کی کاپی کے بعد  فیصلہ کیا جائے۔

آئینی ماہرین کے مطابق اعتماد کا ووٹ لینے کے لیے گورنر کے پاس آئینی اختیار ہے تاہم قائم مقام گورنر کےعہدہ سنبھالتے ہی ڈپٹی اسپيکر اور اسپيکر کيخلاف عدم اعتماد آ جائے گی جس کے باعث وزیراعلیٰ کيخلاف اعتماد کے ووٹ یا عدالتی فیصلے پر عمل کرنے میں وقت درکار ہوگا۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے لارجر بینچ نے آرٹیکل 63 اے کی تشریح سے متعلق صدارتی ریفرنس پر فیصلہ سنادیا ہے، منحرف اراکین تاحیات نااہلی سے بچ گئے تاہم عدالت کا کہنا ہے کہ منحرف ارکان کا ووٹ شمار نہیں کیا جاسکتا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب میں تحریک انصاف کے تقریباً 25 ناراض اراکین نے تحریک انصاف اور مسلم لیگ ق کے مشترکا امیدوار کے بجائے مسلم لیگ ن کے امیدوار حمزہ شہباز کو ووٹ دیا تھا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More