اوگرا فارمولے کے تحت پیٹرول کی قیمت بڑھتی ہے، میں نے کہا تھا ٹیکس نہیں لگاؤں گا،مفتاح اسماعیل

ہم نیوز  |  Aug 16, 2022

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ میں نے یہ نہیں کہا تھا کہ پیٹرول کی قیمت نہیں بڑھے گی، میں نے کہا تھا کہ پیٹرولیم مصنوعات پر ٹیکس نہیں لگاؤں گا۔

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق وزیر خزانہ کا کہنا تھاکہ پیٹرول کا معاملہ آٹو میٹک ہے، یہ اوگرا سے آتا  ہے، ہم نے تو ٹیکس بڑھایا نہ کم کیا، ہم نے یہ وزیراعظم کو بھیجا جسے انہوں نے منظور کرلیا۔وزیر اعظم کے دستخط کے بغیر کچھ نہیں ہوسکتا۔

ان کا کہنا ہے کہ پیٹرلیم مصنوعات میں اضافے کافیصلہ درست تھا اس سے سپلائی نہیں ٹوٹے گی ۔پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے پر آصف زرداری کی رائے کا احترام کرتے ہیں۔بلاول میرے ساتھ تھے، آصف زردار ی جو وضاحت مانگیں گے دوں گا۔

مفتاح اسماعیل نے پیٹرولیم کی قیمتوں سے متعلق اجلاس میں نواز شریف کے اٹھ کر چلے جانے کے سوال پر تبصرہ نہیں کیا، کہا،مریم نواز یا میرے قائد کی میٹنگ پر جو بھی بات ہوئی اس پر جواب نہیں دونگا۔آصف علی زرداری یا بھی کوئی رہنما ہو میں سب کو اعتماد میں لے لوں گا۔

انہوں نے کہا ہے کہ گزشتہ  دنوں ڈالر 235 پر تھا تو ہم نے پیٹرول تین روپے سستا کیا تو کسی نے نہیں پوچھا، اب اگلا ہدف مہنگائی کم کرنا ہے جس میں پیٹرول اور  ڈیزل  نیچے لانا ہدف ہے۔

انکا کہنا ہے کہ آج ہم نے بانڈ کی قیمت بھی اچھی کر لی ہے۔اب کوئی بھی یہ بات نہیں کر رہا کہ پاکستان دیوالیہ کی طرف جا رہا ہے۔اب ہم نے مہنگائی کو کنٹرول کرنا ہے باقی معاملات درست ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کی شرط کے مطابق ستمبر سے پیٹرولیم مصنوعات پر 10 روپے لیوی لگائی جائے گی۔  یہ منی بجٹ نہیں ، دکانداروں کے ٹیکس کا جو سسٹم چینج کیا گیا ، 15 ارب کا ٹیکس لاس آرہا ہے۔

وزیر خزانہ کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کے خط پر دستخط کرچکے ہیں۔آئی ایم ایف نے لیٹر آف انٹینٹ بھیجا تھا ۔راضی نامہ لیٹر سے متعلق دو 3اجلاس ہوچکے ہیں۔ہم آج راضی نامہ لیٹر پر دستخط کرکے بھیج دیں گے۔رواں ماہ امید ہے کہآئی ایم ایف پروگرام پر عمل شرو ع ہوجائے گا۔

ان کا کہنا ہے کہ یکم سے 15 اگست تک ڈالر کی قدر میں کمی اور روپیہ مستحکم ہوا ہے۔بیرون ملک مقیم پاکستانی 30 ارب ڈالر بھیجتے ہیں۔پی ٹی آئی والے گروتھ نہیں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ دیکھتے تھے۔

انہوں نے کہاہے کہ پی ٹی آئی نے 1500 ارب روپے بجلی میں سرکلر ڈیٹ میں چڑھائے۔پی ٹی آئی نے 4 ڈالر کی ایل این جی نہیں لی، مجھے جیل میں ڈالا۔مہنگا ترین سسٹم ہمیں دیا گیا، 10 بلین ریزرو میں، 21 بلین کا اس ماہ قرض دینا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ48بلین ڈالر جب نہیں ہوں گے تو دنیا سے مانگنے پڑیں گے۔ اب کوئی بھی قرض دینے کو تیار نہیں، کونسی حقیقی آزادی؟آئی ایم ایف سمیت کوئی بھی پیسہ دینے کے لیے تیار نہیں تھا۔

انہوں نے کہاہے کہ ہم نے فریج اور گاڑیوں پر پابندی لگائی، امپورٹرزنے بہت تعاون کیا ان کا مشکور ہوں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More