یورپ میں گوگل اور فیس بک کے گرد شکنجہ سخت

بول نیوز  |  Jan 24, 2022

یورپی پارلیمنٹ کی اکثریت نے امریکی ٹیکنالوجی کمپنیوں کی جانب سے اشتہارات کے لیے صارفین کی ٹریکنگ کے خلاف قانون کے حق میں ووٹ دے دیے ہیں۔  

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق یورپی پارلیمنٹ کی مقننہ نے ڈیجیٹل سروسز ایکٹ ( ڈی ایس اے) کے حق میں اکثریت کے ساتھ ووٹ دے دیے ہیں۔ اس قانون کی منظوری سے امریکا کی فیس بک ، ایمیزون اور گوگل جیسے بڑے ٹیکنالوجی جائنٹس کے لیے مشکلات میں اضافہ ہوجائے گا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یورپی یونین کی مقننہ نے ٹریکنگ ایڈ کے گرد شکنجہ سخت کرنے والے قانون ڈی ایس اے کے حق میں 530 اور مخالفت میں78 ووٹ پڑے، جب کہ 80 ارکان نے رائے شماری سے اجتناب کیا۔

ڈیجیٹل سروسز ایکٹ کے نام سے بننے والے اس قانون کے تحت آن لائن خدمات فراہم کرنے والے پلیٹ فارمز کی جانب سے صارفین خصوصاً کم عمر بچوں کی ٹریکنگ محدود کردی جائے گی۔

اس بابت یورپی پارلیمنٹ کے رکن کرسٹیل شیلڈیموز کا کہنا ہے کہ گزشتہ بیس سالوں میں ای کامرس کے میدان میں بہت تبیدلیاں ہوگئیں ہیں۔ یہ آن لائن پلیٹ فارمز ہمارے لیے نئے مواقع کے ساتھ روزمرہ کی زندگی کا اہم حصہ بھی بن گئے ہیں لیکن ان سے خطرات بھی لاحق ہیں۔

اور اس نئے قانون کو  بنانے کا مقصد ان خطرات میں کمی لانا ہے۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More