آج کل فیس بک سے بھی زیادہ ڈاؤن لوڈ کی جانے والی سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایپ ’بی ریئل‘ آپ کو کس مشکل میں ڈال سکتی ہے؟

بی بی سی اردو  |  Sep 27, 2022

Getty Images

جب آپ اپنے فون کی سکرین پر بی ریئل نامی ایپ کی یہ عبارت پڑھتے ہیں کہ 'اب حقیقی ہونے کا وقت ہے' تو آپ کی توقعات بہت واضح ہوتی ہیں۔ آپ اس ایپ کو کھولتے ہیں، اپنی تصویر اور جو کچھ بھی یا کوئی بھی جو آپ کے سامنے ہوتا ہے اس کی تصویر لیتے ہیں۔

یہ کچھ بھی ہو سکتا ہے، وہ کھانا بھی جسے ابھی آپ نے پکایا ہے، وہ ٹی وی پروگرام جو آپ دیکھ رہے ہیں یا دفتر میں آپ کی کمپیوٹر سکرین بھی۔

لیکن جیسا کہ اب اس ایپ بی رئیل کی مقبولیت میں اضافہ ہو رہا ہے تو کیا ہمیں کام کے دوران یا دفتری اوقات میں اس ایپ کے ذریعے سوشل میڈیا پر کچھ بھی پوسٹ کرتے وقت زیادہ احتیاط برتنی چاہیے؟

یا محض ایک معصومانہ مذاق کے دوران اپنے دفتری ساتھی کی کمپیوٹر سکرین پر زوم کرنا چاہیے؟

بی ریئل ایپ کیا ہے؟

اس ایپ کو 2020 میں ریلیز کیا گیا تھا، لیکن 2022 کے وسط میں اس کی مقبولیت میں بہت زیادہ اضافہ ہوا۔ چند رپورٹس کے مطابق بی ریئل ایپ کو دنیا بھر میں 27 ملین سے زیادہ مرتبہ ڈاؤن لوڈ کیا جا چکا ہے۔

اگر آپ اس ایپ کے بارے میں جانتے نہیں ہیں، تو یہ ایک سوشل میڈیا پلیٹ فارم ہے جو ہر روز ایک بے ترتیب وقت پر اپنے تمام صارفین کو بیک وقت نوٹایفائی کرتا ہے۔ یہ آپ کو رکنے اور اپنے اردگرد کی تصویر لینے کے لیے صرف دو منٹ دیتا ہے۔

اس ایپ کا مقصد آپ کو کسی انٹساگرام سٹوری بناتے وقت کی جانے والی احتیاط سے دور رکھنا اور آپ کو 'زیادہ حقیقی' دکھانے پر مجبور کرنا ہے۔

اس ایپ پر جب آپ ایک مرتبہ اپنی پوسٹ شیئر کر دیتے ہیں تو آپ اپنے دیگر دوستوں کی پوسٹوں کا جائزہ بھی لے سکتے ہیں کہ وہ اس وقت میں کیا کر رہے تھے۔

اس ایپ کو استعمال کرنے والے زیادہ تر صارفین نے یہ اعتراف کیا ہے کہ انھیں بی ریئل ایپ پر پوسٹ بناتے وقت اپنے دفتری ساتھیوں کے کمپیوٹر سکرین پر زوم کرنے اور یہ جاننے میں لطف آتا ہے کہ وہ ای میل میں کیا لکھ رہے ہیں یا وہ کیا کام کر رہے ہیں۔

لیکن اب وہ لوگ جو ڈیٹا پروٹیکشن اور پرائیویسی خدشات کے متعلق بات کرتے ہیں اس کے استعمال کرنے کی اجازت پر بحث کر رہے ہیں۔

ایک صارف نے لکھا کہ ’جب دفتری اوقات میں نو سے پانچ کے درمیان بی رئیل کا نوٹیفکیشن موصول ہوتا ہے تو اس وقت کتنی خلاف ورزیاں ہوتی ہے۔‘

جبکہ ایک صارف نے میم شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ بی ریئل میں، میں سب لوگوں کی دفتری ای میلز پڑھنے کی کوشش کرتے ہوئے۔

یہ بھی پڑھیے

کیا آپ سوشل میڈیا کے نشے کا شکار ہیں؟

سوشل میڈیا پر معلومات کی افراتفری کو کیسے ختم کیا جا سکتا ہے؟

’میں اب بھی بستر میں اُس کے پاؤں تلاش کرتا ہوں‘، 13 سالہ لڑکے کے قتل میں سوشل میڈیا کا کردار

اس بارے میں قانون کیا کہتا ہے؟

برطانیہ میں سائبر ڈیٹا لا سولیسٹرز کی ڈیٹا پروٹیکشن ماہر اور مینیجنگ پارٹنر ایما گرین کا کہنا ہے کہ آپ کے کام کی سکرین کی تصویر 'بی ریئل' کے لیے لینا 'یقینی طور پر ایک برا خیال ہے۔'

وہ کہتی ہیں کہ اس ضمن میں ہمیں متعدد باتوں کا خیال رکھنے کی ضرورت ہے۔

'پہلا یہ کہ اگر ان کمپیوٹر سکرینوں پر کوئی ذاتی ڈیٹا موجود ہے تو آپ ممکنہ طور پر ڈیٹا کے تحفظ کے قوانین کی خلاف ورزی کر رہے ہوں گے۔ اس سکرینوں پر کسی کی کوئی ایسی معلومات موجود ہو سکتی ہے جو اس کو قابل شناخت بنا دے۔'

وہ کہتی ہیں 'لہذا اگر آپ اپنی پوسٹ کے لیے تصویر لیتے ہوئے کسی کے ای میل ایڈریس کو واضح کر دیتے ہیں تو تکنیکی طور پر آپ نے قانون توڑا ہے۔‘

Getty Imagesآپ کی کمپنی کا کیا؟

اور سب سے اہم ایما اس بات پر زور دیتی ہیں کہ کہ آپ کے دفتر کے کمپیوٹر سکرین کی کوئی بھی تصویر لینا ممکنہ طور پر آپ کی کمپنی کے قوانین کی خلاف ورزی ہو سکتی ہے۔

وہ کہتی ہیں کہ 'شاید آپ کی ملازمت کے معاہدے میں، ایک ملازم کی حیثیت سے آپ پر کمپنی معلومات کی رازداری لازمہو اور کمپنی کے بارے میں ایسی خفیہ معلومات کو ظاہر نہ کرنے کی پابندی ہو جو ان سکرینوں پر اور دفتر کے پس منظر میں بھی ہوسکتی ہیں۔'

ایما کہتی ہیں کہ اگرچہ بی ریئل ایپ پر آپ اس بات کا انتخاب کر سکتے ہیں کہ آپ کے دوستوں کی فہرست میں کون کون شامل ہو لیکن جو چیز ایک مرتبہ سوشل میڈیا پر پوسٹ ہو گئی تو آپ یقین سے نہیں کہہ سکتے کہ اسے کس کس نے دیکھا اور کس نے نہیں۔ ایسی کسی پوسٹ کے سکرین شاٹس لیے جا سکتے ہیں یا دوستوں میں فون کا تبادلہ ہو سکتا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ 'خاص طور پر اگر آپ دفتر میں لوگوں کی کمپیوٹر سکرینوں کو زوم کر کے دیکھیں گے اور ان کی ای میلز کو پڑھیں گے تو شاید آپ نے کمپنی پالیسیکے مطابق اپنی ملازمت کے معاہدے کے نکات کی خلاف ورزی کر لی ہو۔

وہ کہتی ہیں کہ 'اس پر انضباطی کارروائی ہو سکتی ہے اور اس طرح آپ اپنی کمپنی کے مالک کے ساتھ خود کو مشکل میں ڈال سکتے ہیں۔

زیادہ حقیقی مت بنیں

آپ شاید سوچ رہے ہوں گے کہ یہ نصحیت بڑی ڈرامائی ہے اور اگلی بار جب آپ کو بی ریئل کا الرٹ ملے گا تو آپ اس تصویر کو کھینچنے کے لیے لالچ میں آئیں۔

لیکن ایما کا مشورہ ہے کہ آپ کی جانب سے ایسی کوئی پوسٹ کی جانی کسی پریشانی کا سبب بن سکتی ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More