اب فلورینس تمباکو نوشی ترک کرائے گا

ڈی ڈبلیو اردو  |  Jul 28, 2020

عالمی ادارہ صحت ڈبلیو ایچ او نے'فلورینس‘ کے نام سے ایک ورچوئل ہیلتھ ورکر متعارف کرایا ہے، یہ تمباکو نوشی کی عادت سے پریشان افراد کو مدد فراہم کرتا ہے۔ فلورینس ایسے افراد کو انفرادی سطح پر مشورے دیتا ہے۔

یہ ڈیجيٹل کاوش ایک ایسے وقت پر متعارف کرائی گئی ہے، جب ایسی تحقیقی رپورٹس سامنے آ چکی ہیں، جن میں کہا گیا ہے کہ سگریٹ پینے والے نان اسموکرز کے مقابلے میں زیادہ آسانی سے کووڈ انیس کا شکار ہو سکتے ہیں۔

تمباکو نوش فلورینس کے ساتھ وقت طے کر سکتے ہیں۔ اس ملاقات کے  دوران فلورینس ان سے صحت سے متعلق تمام تر معلومات حاصل کرتا ہے اور پھر اسی بنیاد پر انہیں مشاورت فراہم کرتے ہوئے ایک ایسا پلان تیار کرتا ہے، جس پر عمل پیرا ہوتے ہوئے وہ اپنے ہدف کو حاصل کر سکتے ہیں۔

اس ورچوئل ہیلتھ ورکر سے ویڈیو اور ٹیکسٹ میسج کے ذریعے رابطہ کیا جا سکتا ہے۔ فلورینس آرٹیفیشل انٹیلیجنس یعنی مصنوعی ذہانت کو استعمال کرتے ہوئے مشورے دیتا ہے اور یہ کورونا سے متعلق غلط خبروں سے بھی آگاہی فراہم کرتا ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے مطابق دنیا بھر میں تقریباﹰ ایک اعشاریہ تین ارب افراد سگریٹ نوشی کرتے ہیں اور ان میں سے ساٹھ فیصد اپنی یہ عادت ترک کرنا چاہتے ہیں۔ تاہم ان میں سے صرف تیس فیصد کی مشاورت فراہم کرنے والوں یا اسی طرح کی دیگر سہولیات تک رسائی ہے۔

 تمباکو نوشی سے ہر سال اسی لاکھ کے لگ بھگ افراد ہلاک ہو جاتے ہیں۔ سگریٹ پینے سے عارضہ قلب، سرطان، نطام تنفس کی بیماریوں اور ذیا بیطس کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ اس طرح کی بیماریوں کا شکار افراد کا کووڈ انیس کا شکار ہونے کے امکانات زیادہ ہو جاتے ہیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More