شعیب اختر کا یونس خان کو بیٹنگ کوچ بنانے پر اعتراض

روزنامہ اوصاف  |  Aug 04, 2020

لاہور:سابق قومی فاسٹ بالر شعیب اختر نے یونس خان کو قومی کرکٹ ٹیم کا بیٹنگ کوچ بنانے پر اعتراض کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں زیادہ موثر کردار انجام دے سکتے ہیں۔شعیب اختر کا مقامی نجی چینل سے گفتگو میں کہنا تھا کہ یونس خان کو قومی کرکٹ ٹیم کا بیٹنگ کوچ بنا کر درست فیصلہ نہیں کیا گیا کیونکہ وہ این سی اے میں محمد یوسف کے ساتھ بطور بیٹنگ کوچ نوجوان کھلاڑیوں کی زیادہ بہتر انداز سے تربیت کر سکتے تھے ۔واضح رہے کہ یونس خان کو انگلینڈ ٹور کیلئے جون میں بیٹنگ کوچ مقرر کیا گیا تھا لیکن شعیب اختر کا موقف ہے کہ بد انتظامی میں مبتلا پی سی بی کو زوال سے بچاؤ کیلئے اپنے راستوں کا تعین کرنا ضروری ہے ۔ راولپنڈی ایکسپریس کا کہنا تھا کہ پی سی بی فی الوقت بدانتظامی سے دوچار ہے اور جب تک اہل افراد کو بورڈ سے دور رکھا جائے گا اس وقت تک ملکی کرکٹ زوال کا شکار ہوتی رہے گی۔  44 سالہ شعیب اختر کا کہنا تھا کہ اگر انہیں پی سی بی میں کام کرنے کا موقع ملے تو وہ غیر ملکی سرمایہ کاری کی راہیں کھولنے کی کوشش کریں گے اور بلا معاوضہ کام کرتے ہوئے اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ کوئی انہیں فون کر کے اپنے بچے کی ٹیم میں سلیکشن کیلئے سفارش نہ کر سکے جو پاکستان کرکٹ کا وطیرہ بن چکا ہے ۔ماضی میں پانچ سالہ پابندی کے خاتمے کیلئے آصف زرداری کے شکر گزار شعیب اختر کا کہنا تھا کہ انہوں نے پاکستان کی کئی کامیابیوں میں اہم کردار نبھایا لیکن انہیں اس اعتبار سے یاد نہیں کیا جاتا۔
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More