ٹرمپ کو دوسری بار مواخذے کا سامنا، ایوان نمائندگان میں کارروائی کا آغاز

اردو نیوز  |  Jan 14, 2021

امریکہ کے صدر ٹرمپ کو اپنے دور صدارت کے دوران دوسری مرتبہ مواخذے کی کارروائی کا سامنا ہے۔ امریکی ایوان نمائندگان میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

واضح رہے اس سے قبل امریکہ کے نائب صدر مائیک پنس نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو نااہل قرار دینے سے انکار کر دیا تھا جس کے بعد کارورائی کا آغاز کیا گیا۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق امریکی ایوان نمائندگان میں منگل کے روز صدر ٹرمپ کو 25 ویں آئینی ترمیم کے ذریعے ہٹانے کی قرارداد منظورکی گئی تھی۔ قرارداد کے حق میں 223 ووٹ آئے جبکہ 205 ارکان نے اس کی مخالفت کی۔

 مواخذے کے لیے ضابطہ آرٹیکل کی منظوری ہو چکی ہے۔ مواخذہ آرٹیکل میں کہا گیا ہے کہ ’امریکی صدر ٹرمپ ریاست کے خلاف لوگوں کو تشدد پر ابھارنے اور بدعنوانیوں کے جرائم میں ملوث پائے گئے ہیں۔‘

 

مضمون کے مطابق ٹرمپ کے بیانات کی وجہ سے کیپٹل ہل پر حملہ ہوا اور انتخابی نتائج کو ختم کرنے کے لیے دباؤ ڈالا گیا۔

منگل کو امریکی ایوان نمائندگان میں صدر ٹرمپ کو 25 ویں آئینی ترمیم کے ذریعے ہٹانے کی قرارداد 223 ووٹوں کے بعد منظور کر لی گئی تھی جبکہ قراداد کی مخالفت میں 205 ووٹ پڑے تھے۔

مواخذہ آرٹیکل کے مطابق ٹرمپ کے بیانات کی وجہ سے کیپٹل ہل پر حملہ ہوا (فوٹو: اے ایف پی)یہ قرارداد ڈیموکریٹ رکن جیمی راکسن کی جانب سے پیش کی گئی تھی جس میں مطالبہ کیا گیا  تھا کہ نائب صدر مائیک پنس سیکشن فور کے تحت اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے صدر ٹرمپ کو نااہل قرار دیں۔

جس پر مائیک پنس کی جانب سے سپیکر نینسی پلوسی کو لکھے خط میں صدر کو عہدے سے ہٹائے جانے سے انکار کیا گیا کہ اس سے غلط روایات چل نکلیں گی۔

اس انکار کے ساتھ ہی مواخذے کی کارروائی ہونے کا امکان روشن ہو گیا تھا اور آج اس کے تحت ہی کارروائی ہو رہی ہے۔

46 ویں امریکی صدر منتخب ہونے کے بعد جو بائڈن کی تقریب حلف برداری 20 جنوری کو واشنگٹن ڈی سی میں ہو گی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More