’فٹ بالر ڈیاگو میراڈونا کو دل کے بغیر دفن کیا گیا‘

اردو نیوز  |  Nov 24, 2021

ارجنٹینا کے نیورو لاجسٹ اور ٹی وی میزبان نیلسن کاسٹرو نے کہا ہے کہ لیجینڈ فٹ بالر ڈیاگو میراڈونا کی تدفین کے وقت ان کا دل تابوت میں موجود نہیں تھا۔

خبر رساں ایجنسی میرکو پریس کے مطابق میراڈونا کی پہلی برسی سے ایک دن قبل نیلسن کاسٹرو نے ٹی وی شو کے دوران کہا کہ 'میراڈونا کے دل کو جسم سے نکال دیا گیا تھا تاکہ موت کی وجوہات جاننے کے لیے مزید طبی جائزہ لیا جا سکے۔'

خیال رہے کہ ڈاکٹروں کی غلطی کو ڈیاگو میراڈونا کی بے وقت موت کا ذمہ دار ٹھہرایا جا رہا ہے۔

نیورو لاجسٹ نیلسن کاسٹرو لیجینڈ فٹ بالر سے متعلق کتاب بھی شائع کر رہے ہیں جن میں وہ میراڈونا کی صحت سے متعلق ڈیٹا سامنے لائیں گے۔ کتاب میں انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ 'میراڈونا کو دل کے بغیر ہی دفن کیا گیا ہے۔'

انہوں نے کہا کہ 'ارجنٹینا کے سپورٹس کلب جمناسیا نے میراڈونا کا دل چوری کرنے کا منصوبہ بنایا تھا جس کو ناکام بنا دیا گیا۔'

’یہ معلوم ہو گیا تھا کہ ایسا ہوگا، لہٰذا مزید طبی جائزے کے لیے ان کا دل جسم سے نکال لیا گیا تھا کیونکہ میراڈونا کی موت کے تعین کرنے کے لیے یہ بہت ضروری تھا۔‘

انہوں نے کہا کہ ’معلومات یہی ہیں کہ انہیں دل کے بغیر دفن کیا گیا ہے۔‘

نیورو لاجسٹ نیلسن کاسٹرو نے واضح کیا کہ میراڈونا کے دل کا وزن ’آدھا کلوگرام تھا‘ جبکہ ایک عام فرد کے دل کا وزن 300 گرام ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میراڈونا کو لاحق دل کی بیماریوں کے علاوہ ان کے دل کا سائز بھی بڑا تھا۔

اپنی کتاب میں نیلسن کاسٹرو نے میراڈونا کی صحت سے متعلق لکھا کہ ان کے دل کے ڈاکٹر نے کہا تھا کہ میراڈونا کا جسم  بیماریوں کا مقابلہ کرنے کی خاص صلاحیت رکھتا ہے، اگر ان کی جگہ کوئی اور ہوتا تو اس کی موت واقع ہو جاتی، لیکن مسئلہ یہ تھا کہ میراڈونا کبھی بھی نہیں چاہتے تھے کہ ان کی صحت زیادہ عرصے تک بحال رہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More