ایران ابھی سائنسدان کے قتل کابدلہ لینےکا سوچ ہی رہاتھاکہ ایک اور۔۔۔۔انتہائی افسوسناک خبرآگئی

روزنامہ اوصاف  |  Dec 01, 2020

تہران(ویب ڈیسک) ایران میں چند دن کے درمیان ایک اور بڑا حملہ ، محسن فخری زادے کے قتل کے بعد ایران کے ایک اور کمانڈر کو ڈرون حملے میں مار دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق ایران کی سپا ہ پاسداران انقلاب کے اہم کمانڈر کی ڈرون حملے میں ہلاکت کی اطلاعات سامنے آئی ہیں ۔ خلیجی خبر رساں ادارے العریبیہ  نے دعویٰ کیا ہے کہ عراقی ذرائع کے مطابق ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب کے کمانڈر مسلم شاہدان کو عراق اور شام کی سرحد پر ڈرون سے نشانہ بنایا گیا ہے ۔ العریبیہ کا کہناہے کہ عراقی ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ ایرانی کمانڈر کو اتوار کی رات شام کے ساتھ واقع سرحدی علاقے القائم میں نشانہ بنایا گیا ۔ خبررساں ادارے نے عراقی خفیہ ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ایرانی کمانڈر کی ہلاکت کی تصدیق کے علاوہ اس واقعے کی دیگر تفصیلا ت ابھی تک سامنے نہیں آئی ہیں ۔عراقی صوبے انبار میں پیش آنے والے اس واقعے کے بارے میں غیر مصدقہ الطلاعات کے مطابق ڈرون نے ایرانی کمانڈر کی کار کو نشانہ بنایا ۔ حملے میں کمانڈر مسلم شاہدان کے ساتھ ساتھ ایران کے نواز ملیشیا کے دو جنگجو بھی ہلاک ہوئے ہیں دوسری جانب لبنانی نیوز چینل المائدین نے اپنے ذرائع سے اس خبر کی تردید کی ہے ۔ واضح رہے کہ رواں سال جنوری میں عراق کے دار الحکومت بغداد کے ائیر پورٹ پر امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے میں ایرانی جنرل قاسم سلیمانی سمیت آٹھ افراد ہلاک ہو گئے تھے ۔ راکٹ حملے میں ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا پاپولر موبلائزیشن فورس کے ڈپٹی کمانڈر ابو مہدی المہندس بھی ہلاک ہوگئے تھے ۔
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More