شریفے کے صحت پر بے شمار کرشماتی فوائد

بول نیوز  |  Sep 18, 2021

شریفے کو ہندی زبان میں سیتا جبکہ انگریزی زبان میں شوگر ایپل یا کسٹرڈ ایپل کہا جاتا ہے، یہ پھل اپنے اندر صحت کا خزانہ سموئے ہے۔

اسے کھانا دشوار ہے لیکن اس چھوٹے سے پھل میں قدرت نے بے شمار فوائد چُھپا رکھے ہیں، شریفے میں مناسب مقدار میں اینٹی آکسیڈنٹس، وٹامن سی، بی 6 ، کیلشیم، میگنیشم اور آئرن وغیرہ پائے جاتے ہیں۔

شریفہ ان چند پھلوں میں سے ایک ہے جس میں پوٹاشیم اور سوڈیم کا ایک متوازن تناسب ہوتا ہے جو جسم میں بلڈ پریشر کے اتار چڑھاؤ کو کنٹرول کرنے میں مدد کرتا ہے۔

اس کے علاوہ شریفے میں میگنیشیم کا زیادہ مواد ہموار دل کے پٹھوں کو آرام دیتا ہے جس کی وجہ سے فالج اور دل کا دورہ پڑنے کا خطرہ کم ہوسکتا ہے، یہ

کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد دیتا ہے جبکہ جسم میں اچھے کولیسٹرول کو بڑھاتا ہے۔

شریفہ وٹامن سی اور ربوفلاوین کا ایک بھرپور ذریعہ ہے، یہ دو انتہائی ضروری غذائی اجزاء ہیں جو آنکھوں کو صحت مند رکھنے کے لئے اہم ہیں۔اس دور میں جہاں ہم اپنے فون، ٹی وی، ٹیبلٹ اور لیپ ٹاپ کی اسکرینوں سے چپکے ہوئے ہیں تو وہیں ہمارے لئے اپنی آنکھوں کی اچھی دیکھ بھال کرنا ضروری ہے۔

 شریفے میں موجود ضروری غذائی اجزاء آپ کی آنکھوں کو خشک ہونے سے روکتی ہیں تاکہ مناسب طریقے سے کام کرسکیں۔

شریفہ فلیوونائڈز سے بھرپور ہوتا ہے جو کئی قسم کے ٹیومر اور کینسر کے علاج میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔

اس پھل میں الکلائڈز اور ایسیٹوجنن جیسے عناصر بھی ہوتے ہیں جو کینسر کے خطرے کو کم کرنے کے لئے جانے جاتے ہیں۔

 شریفے کی اینٹی آکسیڈنٹ خصوصیات صحت مند خلیوں کو متاثر کیے بغیر کینسر پیدا کرنے والے خلیوں کے خلاف بھی کام کرتی ہیں۔

شریفہ ان لوگوں کے لئے انتہائی اہم پھل ہے جو سوزش کی بیماریوں میں مبتلا ہیں، اس پھل میں موجود اینٹی آکسیڈنٹس درد کو روکنے میں مدد کرسکتے ہیں، نہ صرف پھل بلکہ اس کے پتے بھی اینٹی سوزش خصوصیات سے مالا مال ہیں۔

اس میں وٹامن بی 6 پایا جاتا ہے جس کی کمی چڑچڑے پَن کا بھی باعث بنتی ہے، لہٰذا اس پھل کا استعمال ڈیپریشن اور تناؤ بھی دُور کرتا ہے۔

Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More